ہوم   > پاکستان

بلوچستان: افغان سرحد بھی بند، محصورین کیلئے لائحہ عمل طے

SAMAA | - Posted: Feb 28, 2020 | Last Updated: 3 months ago
SAMAA |
Posted: Feb 28, 2020 | Last Updated: 3 months ago

پاکستان نے کرونا وائرس کا پھیلاؤ روکنے کیلئے بلوچستان میں ایران اور افغانستان کے سارے تمام سرحدی پوائنٹس بند کردیے جبکہ ایران میں محصور پاکستانی زائرین کی واپسی کیلئے لائحہ عمل طے کرلیا گیا ہے جن کیلئے بلوچستان میں 300 آئسولیشن وارڈز قائم کیے جائیں گے۔

کوئٹہ میں پراونشل ڈیزاسٹر منجمنٹ اتھارٹی کے کنٹرول روم میں میڈیا کو بریفنگ دیتے ہوئے وزیر خزانہ ظہور بلیدی، ڈی جی پی ڈی ایم اے عمران زرکون اور ترجمان بلوچستان حکومت لیاقت شاہوانی نے کہا کہ ایران میں محصور 5 ہزار سے زائد پاکستانی زائرین کو مرحلہ وار وطن واپس لینے کیلئے طریقہ کار طے کرلیا گیا ہے۔

زائرین کو ہزار، ہزار لوگوں کے گروپ کی صورت میں تفتان لایا جائے گا۔ جہاں ان کی اسکریننگ ہوگی۔ اگرٹیسٹ مثبت آیا تو ان کو  قرنطنیہ میں رکھا جائے گا۔ اس کے ساتھ ہی بلوچستان میں 300 آئسولیشن وارڈ بھی قائم کیے جائیں گے۔

انہوں نے کہا کہ پاک ایران کے بعد پاک افغان بارڈر بھی بند کیا گیا ہے۔ حکومت بلوچستام تمام دستیاب وسائل کو بروئے کار لارہی ہے۔ اب تک بلوچستان میں کرونا وائرس کا کوئی کیس رپورٹ نہیں ہوا۔ وائرس سے متعلق آگاہی مہم بھی شروع کی جارہی ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ تفتان میں قرنطنیہ قائم کردیا گیا ہے جس دو ہزار لوگوں کی گنجائش ہے۔ اس وقت تک 30 ہزار ماسک کا بندوبست کیا گیا ہے جبکہ حکومت بلوچستان نے 20 کروڑ روپے محکمہ صحت کو فوری جاری کئے گئے ہیں۔

انہوں نے بتایا  کہ گزشتہ ایک ماہ کے دوران ایران بارڈر سے سات ہزار چھ سو لوگ پاکستان آئے جس میں دو ہزارایک سو سے زائد کا تعلق بلوچستان سے تھا۔ بلوچستان سے تعلق رکھنے والوں میں سے سات سو افراد کی سکریننگ مکمل کرلی گئی ہے۔ ان میں سے ایک بھی کیس مثبت نہیں آیا۔

WhatsApp FaceBook

آپ کے تبصرے

Your email address will not be published.

متعلقہ خبریں
WhatsApp FaceBook
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube