ہوم   > پاکستان

ہمیں ایران سے بلاکر قرنطینہ میں رکھا جائے، پاکستانی شہری

SAMAA | - Posted: Feb 26, 2020 | Last Updated: 1 month ago
SAMAA |
Posted: Feb 26, 2020 | Last Updated: 1 month ago

سرحد بند ہونے کے باعث 5 دن سے ایران میں محصور پاکستانیوں کا کہنا ہے کہ انہیں پینے کا پانی تک میسر نہیں ہے۔ حکام ہمیں پاکستان لے جاکر جتنے دن چاہیں نگرانی سینٹر میں رکھیں۔

ایران میں کرونا وائرس کے پھیلاؤ کے بعد پاک ایران سرحد پر ہر قسم آمد و رفت بند کردی گئی ہے جس کے باعث درجنوں پاکستانی ایران میں محصور ہوگئے ہیں جبکہ پاکستان میں محصور 350 ایرانی شہریوں کو گزشتہ روز تفتان بارڈر کے راستے ایران جانے کی اجازت دے دی گئی۔

تفتان بارڈر پر ایران کی حدود میں محصور پاکستانی شہریوں نے سوشل میڈیا پر ویڈیو پیغام جاری کرتے ہوئے کہا ہے کہ وہ پانچ روز سے یہاں پھنسے ہیں۔ ایران کی حکومت کسی قسم کی سہولت نہیں فراہم کر رہی ہے۔ ان کے پاس پینے کا پانی تک نہیں ہے۔

شہریوں کا کہنا ہے کہ سرحد کے اطراف میں کسی قسم کی سہولت دستیاب نہیں ہے نہ ہی ایرانی حکام سرکاری سطح پر انہیں کھانا پینا دے رہی ہے جبکہ دوسری جانب پاکستانی حکام انہیں واپس آنے کی اجازت دینے سے انکار کر رہے ہیں۔

انہوں نے حکومت سے درخواست کی کہ ہمیں ایران سے لے جاکر بلوچستان میں قائم قرنطینہ میں جتنے دن چاہیں رکھ لیں لیکن یہاں سے ہر صورت نکال لیں۔

پاکستانی شہریوں کی جانب سے شیئر کی گئی ویڈیوز میں دیکھا جاسکتا ہے کہ ڈرائیورز اور تاجر سڑک پرکھلے آسمان تلے بیٹھے ہوئے ہیں اور بعض افراد گاڑی کے نیچے لیٹے نظر آتے ہیں۔

WhatsApp FaceBook

آپ کے تبصرے

Your email address will not be published.

متعلقہ خبریں
WhatsApp FaceBook
 
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube