ہوم   > پاکستان

وزیراعظم کی حور والی تقریر پر طنز، اینکر کیخلاف درخواست

SAMAA | - Posted: Feb 24, 2020 | Last Updated: 1 month ago
SAMAA |
Posted: Feb 24, 2020 | Last Updated: 1 month ago

تحریک انصاف کے ایک رہنما نے وزیراعظم عمران خان کے بیان پر مزاحیہ پروگرام کرنے والے اینکرز کے خلاف ایف آئی اے کے سائبر کرائمز سرکل کو درخواست دے دی ہے۔

مرتضیٰ چوہدری اور مصطفیٰ چوہدری نجی ٹی وی چینل ’نیو نیوز‘ پر نیشنل ایلین براڈکاسٹ ( نیب) کے نام سے مزاحیہ پروگرام کرتے ہیں جس میں وہ مختلف شخصیات کے ’ڈمی‘ کو مدعو کرتے ہیں۔

تحریک انصاف کے رکن قومی اسمبلی شوکت علی نے درخواست میں موقف اختیار کیا کہ مرتضیٰ چوہدری ( خالد بٹ) نے 29 جنوری کو ایک ویڈیو کلپ شیئر کیا جس میں انہوں نے یہ ظاہر کرنے کی کوشش کی کہ وزیراعظم منشیات کے عادی ہے ہیں اور خود کو انجکشن لگاتے رہتے ہیں۔

درخواست گزار کے مطابق یہ ویڈیو کلپ جھوٹ اور الزام پر مبنی ہے اور اس کا مقصد وزیراعظم کی تضحیک کرنا تھا۔

شوکت علی نے درخواست کے ساتھ پروگرام کا اسکرپٹ بھی جمع کراتے ہوئے پروگرام کے میزبان اور پروڈیوسرز کے خلاف کارروائی کا مطالبہ کیا ہے۔

مرتضیٰ چوہدری کا 29 جنوری کا پروگرام وزیراعظم عمران خان کی اس تقریر پر تھا جو انہوں نے 27 جنوری کو کراچی میں کی تھی۔ اس تقریر میں وزیراعظم نے کہا تھا کہ 2013 میں جب اسٹیج سے گرا تو بہت درد ہو رہا تھا مگر جب شوکت خانم اسپتال کی نرس نے انجیکشن لگایا تو درد ختم ہوگیا اور وہ نرس حور نظر آنے لگی۔

پروگرام میں مختلف شخیات کا روپ دھار کر شریک ہونے والے مصطفیٰ چوہدری نے کہا کہ ایف آئی اے نے ابھی تک ان سے رابطہ نہیں کیا مگر سوشل میڈیا کے ذریعے پتہ چلا کہ ہمارے خلاف درخواست دی گئی ہے۔

انہوں نے کہا کہ وہ اس قسم کے پروگرامات کرتے رہتے ہیں اور مسائل کا سامنا بھی کرنا پڑتا ہے مگر ’ان مسائل‘ کے پیچھے کوئی سیاسی جماعت نہیں ہوتی تھی۔

انہوں نے کہا کہ یہ پہلی مرتبہ ہے کہ ایک سیاسی جماعت نے ہمارے خلاف درخواست دی ہے اور ایک جمہوری حکومت میں ہمیں دباؤ کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔

WhatsApp FaceBook

آپ کے تبصرے

Your email address will not be published.

متعلقہ خبریں
WhatsApp FaceBook
 
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube