ہوم   > پاکستان

کوئٹہ میں احتجاج کرنے پر طالبات سمیت 97 گرفتار

SAMAA | - Posted: Feb 24, 2020 | Last Updated: 3 months ago
SAMAA |
Posted: Feb 24, 2020 | Last Updated: 3 months ago

بلوچستان اسمبلی کے باہر احتجاج کرنے پر بولان یونیورسٹی آف میڈیکل اینڈ ہیلتھ سائنسز کے ستانوے ملازمین اور طلبہ کو گرفتار کر لیا گیا۔ گرفتار ہونے والوں میں سترہ طالبات بھی شامل ہیں۔

بلوچستان اسمبلی کے اجلاس کے موقع پر یونیورسٹی کے ملازمین اور طلبہ بولان میڈیکل  کالج کو اپنی سابقہ حیثیت میں بحال کرنے اور میڈیکل یونیورسٹی ایکٹ 2017 میں ترمیم کے مطالبات لیکر احتجاج کے لئے اسمبلی عمارت کے باپر پہنچے۔

اسمبلی کے باہر تعینات پولیس اہلکاروں نے انہیں احتجاج کی اجازت نہ دی اور گرفتارکرکے مختلف تھانوں میں منتقل کردیا۔ گرفتار ہونے والوں میں 30 کے قریب ملازمین اور 17 طالبات شامل ہیں۔

ڈی آئی جی کوئٹہ عبدالرزاق چیمہ کے مطابق مجموعی طور پر 97 ملازمین اور طلبہ کو دفعہ 144  کی خلاف ورزی پر حراست میں لیا گیا اور چند گھنٹے بعد رہا کردیا گیا ہے۔

انہوں نے بتایا کہ کوئٹہ میں دہشت گردی کا خطرہ موجود ہے۔ اس لئے ان ملازمین اور طلبہ کو اسمبلی کے سامنے مظاہرہ کی اجازت نہیں دی گئی۔ چند روز قبل بھی عدالت روڈ اس وقت دھماکہ ہوا جب قریب ہی پریس کلب کے سامنے ایک مذہبی جماعت کا  احتجاجی مظاہرہ ہورہا تھا۔ اس لئے ہم نے طلبہ کو احتجاج کرنے سے منع کیا مگر وہ بضد تھے جس پر انہیں حراست میں لیا۔

WhatsApp FaceBook

آپ کے تبصرے

Your email address will not be published.

متعلقہ خبریں
WhatsApp FaceBook
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube