ہوم   > پاکستان

والدین کا بیٹے سے تحفظ کیلئے سندھ ہائیکورٹ سے رجوع

SAMAA | - Posted: Feb 24, 2020 | Last Updated: 3 months ago
SAMAA |
Posted: Feb 24, 2020 | Last Updated: 3 months ago

ماں اور باپ نے اپنے ہی بیٹے سے جان کو خطرہ ہونے پر سندھ ہائیکورٹ سے رجوع کرلیا، بوڑھے میاں بیوی کا کہنا ہے کہ ان کا بیٹا جان سے مارنے کی دھمکیاں دیتا ہے اس وجہ سے ہم اپنے گھر بھی نہیں جاسکتے۔

سندھ ہائیکورٹ سے میاں بیوی کریم بخش خان اور جنت مائی نے رجوع کرکے اپنے بیٹے سے تحفظ فراہم کرنے کی درخواست کردی۔ مدعی خاتون کا کہنا ہے کہ ہم نے اپنے بیٹے کو تعلیم کے اخراجات دیئے اور وکیل بنایا، آج ہم اس سے چھپتے پھر رہے ہیں، ہمارا بیٹا ہی ہمارا دشمن بن گیا ہے۔

عدالت نے ریمارکس دیتے ہوئے کہا کہ اگر آپ کا بیٹا وکیل ہے تو آپ کو چاہئے کہ معاملہ سندھ بار کونسل میں لے جائیں۔ جس پر ان کا کہنا تھا کہ بار کونسل کہتی ہے کہ وہ صرف وکلاء کے معاملات دیکھتی ہے۔

جنت مائی نے عدالت کو بتایا کہ وہ جب پنجاب میں تھیں تو انہوں نے اپنی نواسی کو بہو کی طبیعت خراب ہونے پر بیٹے کے گھر بھیجا تھا، چار ماہ بعد واپس مانگا تو اس نے کہا کہ اپنے سوتیلے بیٹے سے نکاح کرادیا، ہم نے اس پر واضح کردیا کہ بچی کو لئے بغیر نہیں جائیں گے، جس پر اس نے کہا کہ اگر اس شادی پر راضی نہ ہوئے تو پورے خاندان کو تباہ کردے گا۔

کریم بخش کا مزید کہنا ہے کہ ہمارا بیٹا ہمیں ہراساں کررہا ہے یہاں تک کہ ہم پر پولیس میں ہمارے خلاف جھوٹا مقدمہ بھی بنوادیا۔

سندھ ہائیکورٹ نے پولیس کو بوڑھے ماں باپ کیخلاف کسی بھی قسم کی غیرقانونی کارروائی سے روک دیا۔

WhatsApp FaceBook

آپ کے تبصرے

Your email address will not be published.

متعلقہ خبریں
WhatsApp FaceBook
KARACHI, SHC, Sindh High Court, FAMILY DISPUTE, PARENTS SECURITY, LAWYER SON
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube