ہوم   > پاکستان

کیماڑی:پراسرارگیس سے6افرادکی ہلاکت کےبعدمتنازعہ بیانات

SAMAA | - Posted: Feb 17, 2020 | Last Updated: 2 months ago
SAMAA |
Posted: Feb 17, 2020 | Last Updated: 2 months ago

کیماڑی کے علاقے میں ایمرجنسی نافذ

کراچی کے ساحلی علاقے کیماڑی میں پراسرار گیس کے اخراج سے ہلاکتوں کی تعداد 6 تک جا پہنچی ہے، جب کہ گیس سے 100 سے زائد افراد متاثر بھی ہوئے۔ حکومت تاحال گیس کا سراغ لگانے میں ناکام۔

ڈی آئی جی ساؤتھ کا بڑا دعویٰ

ڈی آئی جی ساؤتھ شرجیل کھرل کا کہنا ہے کہ پُراسرار گيس سے بڑی تعداد میں افراد متاثر ہوئے ہیں۔ کيميکل سے بھرا جہاز پورٹ پر لنگر انداز ہوا، جہاز آف لوڈ کرنے کيلئے ڈکس کھولی تو گيس پھيل گئی۔

ایدھی کی اپیل

ایدھی سینٹر کے سربراہ فیصل ایدھی کا کہنا ہے کہ کیماڑی میں پورٹ ایریا میں زہریلی گیس کا اخراج ہوا ہے، اپیل کرتا ہوں کہ پورٹ اتھارٹی حقائق سے آگاہ کریں۔ حکام کی جانب سے لوگوں کو فوری طور پر منہ پر ماسک پہننے اور کھڑکیاں دروازے بند رکھنے کی بھی خصوصی ہدایات جاری کی گئی ہیں۔

وزیراعلیٰ سندھ کا نوٹس

دوسری جانب وزیراعلیٰ سندھ نے اتوار کے روز کراچی کے علاقے کیماڑی میں زہریلی گیس پھیلنے کا نوٹس لیا تھا۔ وزیراعلیٰ مراد علی شاہ نے جناح اسپتال اور عباسی شہید اسپتال میں اقدامات کرنے کی ہدایت بھی کی، جب کہ ڈی سی اور ایس ایس پی کو عوام کی مدد کرنے کی ہدایت جاری کی گئی ہے۔ کمشنر کراچی کو بھی زہریلی گیس کو ختم کرنے کے اقدامات سے متعلق فوری رپورٹ پیش کرنے کا حکم دیا گیا۔

ایمرجنسی نافذ

صوبائی وزیر صحت سندھ عذرا پيچوہو نے کيماڑی واقعہ کا نوٹس لیتے ہوئے گزشتہ روز اتوار کو محکمہ صحت کی ٹيم کيماڑی روانہ کی۔ جب کہ کيماڑی کے اطراف اسپتالوں ميں ايمرجنسی بھی نافذ کردی گئی ہے۔

مرنے والوں میں خواتین اور بچہ بھی شامل

اسپتال انتظامیہ کے مطابق زہريلی گيس سے متاثر مزید 2 خواتین کو اسپتال منتقل کیا گیا ہے۔ مرنے والوں میں 2 خواتین، ايک بچہ اور 3 مرد شامل ہیں۔ کیمیکل کی بو سے متاثرہ افراد کی تعداد 100سے زائد ہے۔ ضیاء الدین اسپتال میں 100سے زائد متاثرہ افراد کو منتقل کيا گيا۔

کتیانہ اسپتال میں 22 ، جناح میں 8اور سول اسپتال میں 2 مريض لائے گئے۔ چیف آپریٹنگ آفیسر ضیاء الدین اسپتال کا کہنا ہے کہ 3 افراد آئی سی یو میں ہیں، جب کہ ایک کی حالت تشویشناک ہے، سگریٹ پینے والے اور سانس کے مرض کا شکار افراد زیادہ متاثر ہوئے ہیں۔ متاثرہ مریضوں میں خواتین اور بچے بھی شامل ہیں۔

شراب کی بھٹیاں؟ علی زیدی کا بیان

کیماڑی میں زہریلی گیس سے متاثرہ افراد کی عیادت کے موقع پر میڈیا سے گفتگو میں وفاقی وزیر علی زیدی کا کہنا تھا کہ ڈاکٹرز کی جانب سے 6 افراد کی ہلاکت کی تصدیق کی گئی ہے۔ اسپتال کو ہر ممکن تعاون کی یقین دہائی کرائی ہے، گیس کا کیا معاملہ تھا، ہم پتا کر رہے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ کے پی ٹی اور ڈی سی رینجرز سمیت کسی کے پاس اس واقعہ کی تحقیقات کا طریقہ نہیں۔ ایس بی ڈی جی ادارہ جو کے پی ٹی کے اندر آتا ہے وہ اس واقعہ کی تحقیقات کررہا ہے، اہل علاقہ سے ماسک لگانے کر رکھنے کی درخواست کی گئی ہے۔ مسئلے کو حل کرلیں گے، مجھے تو بتایا گیا تھا کہ یہاں شراب کی بھٹیاں بھی ہیں ہوسکتی ہیں، وہاں سے کوئی گیس نکلی ہو، اگر کوئی یہ کہے کہ یہاں بھٹیاں نہیں ہیں تو وہ خود کو بیوقوف بنا رہا ہے، خورشید شاہ صاحب اور سعید غنی سے بات ہوئی ہے، مل کر کام کرنے کا عزم ظاہر کیا ہے۔

نوٹ: یہ ڈویلپنگ اسٹوری ہے۔ وقتاً فوقتاً اپ ڈیٹ ہوتی رہے گی۔

WhatsApp FaceBook

آپ کے تبصرے

Your email address will not be published.

متعلقہ خبریں
WhatsApp FaceBook
 
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube