ہوم   > پاکستان

عمران فاروق قتل کیس: ویڈیولنک سے گواہوں کے بیانات ریکارڈ

SAMAA | - Posted: Feb 4, 2020 | Last Updated: 2 months ago
SAMAA |
Posted: Feb 4, 2020 | Last Updated: 2 months ago

عینی شاہد خواتین سمیت مزید3افراد نے بیان ریکارڈ کرایا

ڈاکٹر عمران فاروق کے قتل کی واردات اپنی آنکھوں سے دیکھنے والے 3 برطانوی گواہوں کے بیانات ویڈیو لنک کے ذریعے ریکارڈ کرلئے گئے، عینی شاہدین نے بتایا کہ حملہ آوروں نے کیا پہن رکھا تھا اور کیسے دکھتے تھے۔ ایک خاتون گواہ نے نے پولیس کو اطلاع دیکر جائے وقوعہ پر بلایا تھا۔

ایم کیو ایم کے سینئر رہنماء ڈاکٹر عمران فاروق کے لندن میں قتل کے 3 عینی شاہدین کے بیانات انسداد دہشتگردی عدالت میں ویڈیو لنک کے ذریعے قلمبند کرلئے گئے۔

برطانوی خاتون ٹیچر ایلیسن کوشنر کا کہنا ہے کہ انہوں نے اپنی کھڑکی سے حملہ آور کو دیکھا جس کی عمر تقریباً 30 سال، قد ساڑھے 5 فٹ، وہ بیس بال کیپ اور بڑے سائز کی جیکٹ پہنے ہوئے تھا۔

خاتون نے بتایا کہ ملزم نے ڈاکٹر عمران فاروق کو اوئے کہہ کر مخاطب کیا پھر حملہ آور ہوا، عمران فاروق کے پہلے چلانے اور پھر دروازے کے باہر پڑے کراہنے کی آوازیں بھی سنیں۔

خاتون کا کہنا ہے کہ انہوں نے پولیس کو فون کرکے بلایا اور ان کے بیان پر ہی حملہ آور کا خاکہ تیار ہوا تھا۔

ایک اور خاتون لارا یکنگ نے بتایا شام 5 بجکر 25 منٹ پر انہوں نے ایک شخص کو ڈاکٹر عمران فاروق کے سر میں اینٹ مارتے دیکھا، پھر وہ زمین پر پڑے دکھائی دیئے۔

تیسرے عینی شاہد میکس ڈیوس نے بتایا وہ گھر کے پاس والی بال کھیل رہے تھے جبکہ دیکھا کہ ایک شخص نے ڈاکٹر عمران فاروق کو دبوچا اور دوسرے نے چاقو سے وار کئے۔

عدالت نے انٹیلجنس اینالسٹ جوناتھن بانڈ، پولیس افسر پال ہال مین اور ڈیٹیکٹو کانسٹیبل جیمز لنچ سمیت مجموعی طور پر 11 گواہان کے بیانات ویڈیو لنک پر ریکارڈ کرلئے۔

جج شاہ رخ ارجمند نے 5 فروری کو چھٹی کے روز بھی 2 مزید برطانوی گواہان کے بیانات قلمبند کرنے کا فیصلہ کرلیا، ڈاکٹر عمران فاروق کی بیوہ شمائلہ عمران کا بیان پہلے ہی ریکارڈ کیا جاچکا۔

WhatsApp FaceBook
MQM

آپ کے تبصرے

Your email address will not be published.

متعلقہ خبریں
WhatsApp FaceBook
 
MQM, DR IMRAN FAROOQ, LONDON, UK, WITNESS, ATC, PAKISTAN, ALTAF HUSSAIN,
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube