ہوم   > پاکستان

شہریارآفریدی کے چرس والے بیان کا پس منظر کیا ہے

SAMAA | - Posted: Feb 3, 2020 | Last Updated: 4 months ago
SAMAA |
Posted: Feb 3, 2020 | Last Updated: 4 months ago

وزیر مملکت برائے انسداد منشیات شہریار آفریدی کی ایک ویڈیو کئی دن سے سوشل میڈیا پر وائرل ہورہی ہے جس پر سوشل میڈیا صارفین سمیت بعض ٹی وی چینلز نے بھی اعتراض اٹھایا ہے۔

شہریار آفریدی کی گفتگو پشتو میں ہے۔ شاید اسی لیے زیادہ لوگوں کو بات سمجھنے میں مسئلہ ہوا اور انہوں نے بات سمجھنے کی کوشش کے بجائے اسے اپنے انداز میں آگے پھیلانے پر زور دیا۔

ویڈیو میں شہریار آفریدی کہتے ہیں کہ ’ہم ہر سال ہیروئن، چرس اور افیون کی بھاری مقدار پکڑتے ہیں اور آخر میں اس کو جلا دیتے ہیں جبکہ دیگر ممالک ان سے ادویات بناتے ہیں۔ وزیراعظم عمران خان بھی یہی چاہتے ہیں اور ہم تیراہ (ضلع خیبر) میں اس کی فیکٹری بنائیں گے۔ اس سے لوگوں کو روزگار کے مواقع بھی ملیں گے۔‘

سوشل میڈیا صارفین اور صحافیوں کی تنقید نے شہریار آفریدی کو باقاعدہ وضاحت پر مجبور کیا۔ پیر کو ٹوئٹر پر ایک وضاحتی بیان میں انہوں نے کہا کہ میری ویڈیو سوشل میڈیا پر جھوٹے الزامات کے ساتھ وائرل ہے۔ میں کوہاٹ میں اپنے قبائلی عوام کو بتارہا تھا کہ حکومت تیراہ اور دیگر قبائلی علاقوں میں نامیاتی دوائیں بنانے کے کارخانے لگائے گی۔

انہوں نے کہا کہ بھنگ سے بننے والے تیل (ہیمپ آئل) کی فیکٹریاں لگائیں گے جس سے نوجوانوں کو روزگار ملے گا اور ملکی برآمدات میں اضافہ ہوگا۔

شہریار آفریدی نے آخر میں یہ بھی کہا کہ سیاسی مخالفین کے میڈیا سیل کے پاس اب جھوٹ بیچنے کے سوا کچھ نہیں بچا۔

WhatsApp FaceBook

آپ کے تبصرے

Your email address will not be published.

متعلقہ خبریں
WhatsApp FaceBook
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube