Sunday, September 20, 2020  | 1 Safar, 1442
ہوم   > پاکستان

بی آرٹی منصوبے میں تاخیر، ٹھیکیدار پر بھاری جرمانے کافیصلہ

SAMAA | - Posted: Jan 30, 2020 | Last Updated: 8 months ago
SAMAA |
Posted: Jan 30, 2020 | Last Updated: 8 months ago

خیبرپختونخوا حکومت نے مارچ تک کی ڈیڈ لائن دیدی

خیبر پختونخوا حکومت نے بی آر ٹی  منصوبے کی تکميل کیلئے بڑا اعلان کرديا، مارچ تک منصوبہ مکمل نہ ہوا تو ٹھیکيدار کو روزانہ 50 کروڑ روپے جرمانہ ہوگا۔

خیبرپختونخوا حکومت نے بی آر ٹی منصوبے کی تکمیل کیلئے ایک اور ڈیڈ لائن دیدی، منصوبے کے ٹھیکے دار کو 31 مارچ تک کی مہلت دیتے ہوئے بھاری جرمانے کی بھی دھمکی دی گئی ہے۔

وزیر اطلاعات شوکت یوسفزئی کہتے ہیں کہ بی آر ٹی منصوبہ مارچ تک مکمل نہ ہوا تو ٹھیکے دار کو روازنہ کی بنیاد پر 50 کروڑ روپے جرمانہ دینا پڑے گا۔

مزید جانیے : صوبائی وزیر بھی بی آر ٹی کی ناقص منصوبہ پر بول اٹھے

ان کا کہنا تھا کہ منصوبے کا تعمیراتی کام تکمیل کے مراحل میں ہے جبکہ اسٹیشنز پر کمپیوٹرائزڈ سسٹم کی تنصیب مارچ تک مکمل ہوجائے گی۔

انہوں نے بتایا کہ بی آر ٹی ریچ ون کے 8 اسٹیشن مکمل ہیں، ریچ ٹو کے 7 اسٹیشن پر کام حتمی مراحل میں ہے جبکہ ریچ 3 کے 15 اسٹیشن کا کام 2 ماہ میں مکمل  ہوگا۔

یہ بھی پڑھیں : بی آر ٹی ٹریک پر چلنے والی سائیکلیں پشاور پہنچ گئیں

پاکستان تحریک انصاف کی صوبائی حکومت نے اپنے پہلے دور 2013ء سے 2018ء کے دوران بی آر ٹی منصوبے کا آغاز کیا تھا، جس کیلئے دعویٰ کیا جارہا تھا کہ یہ پنجاب کے میٹرو بس منصوبے سے کم مدت اور کم لاگت میں تیار ہوگا، تاہم تقریباً 3 سال کا عرصہ گزرنے کے باوجود یہ منصوبہ مکمل نہیں ہوسکا، اس کی لاگت میں بھی کئی گنا اضافہ ہوچکا ہے۔

WhatsApp FaceBook

آپ کے تبصرے

Your email address will not be published.

متعلقہ خبریں
WhatsApp FaceBook
PAKISTAN, KP, PTI, IMRAN KHAN, PERVEZ KHATTAK, BRT, PESHAWAR, DEADLINE,
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube