Friday, September 18, 2020  | 29 Muharram, 1442
ہوم   > پاکستان

امریکی سفارتخانے کی گاڑی کی ٹکر سے خاتون ہلاک،5زخمی

SAMAA | - Posted: Jan 26, 2020 | Last Updated: 8 months ago
SAMAA |
Posted: Jan 26, 2020 | Last Updated: 8 months ago

ڈرائیور گرفتار

اسلام آباد میں امریکی سفارتخانے کی تیز رفتار گاڑی نے ٹریفک سگنل توڑ کر دوسری گاڑی کو ٹکر مار دی جس میں ایک خاتون جاں بحق اور 5 افراد زخمی ہوگئے۔ پولیس نے سفارت خانے کی گاڑی تحویل میں لیکر ڈرائیور کو گرفتار کرلیا ہے۔

پولیس کے مطابق اسلام آباد کے فیصل چوک پر ایک تیز رفتار لینڈ کروزر گاڑی نے سگنل توڑا اور آگے جاکر ایک کار کو ٹکر ماردی۔ کار میں سوار ایک خاتون موقع پر دم توڑ گئی جبکہ 5 افراد زخمی ہوگئے۔

زخمی اور لاشوں کو پمز اسپتال منتقل کردیا گیا ہے۔ جہاں جاں بحق خاتون کی شناخت نادیہ بی بی کے نام سے ہوئی جبکہ زخمیوں میں اس کے شوہر محمد اخلاق سمیت 5 افراد شامل ہیں۔ نازیہ بی بی کی لاش پمز اسپتال میں پوسٹمارٹم کے بعد آبائی علاقے روانہ کر دی گئی۔ چار زخمی مرحم پٹی کے بعد اسپتال سے فارغ جبکہ ایک کا علاج جاری ہے۔

پولیس نے موقع سے ڈرائیور کو گرفتار کرکے گاڑی تحویل میں لے لی۔ ڈرائیور کی شناخت امجد زمان کے نام سے ہوئی جبکہ گاڑی امریکی سفارت خانے کی ملکیت ہے۔ تھانہ مارگلہ پولیس نے واقعے کا مقدمہ درج کرلیا۔ ایف آئی آر کے مطابق حادثے کا شکار ہونے والا خاندان رشتہ دار کے انتقال پر تعزیت کیلئے ہری پور جا رہا تھا۔

واضح رہے کہ یہ اپنی نوعیت کا پہلا واقعہ نہیں ہے۔ اس سے قبل 7 اپریل 2018 کو اسلام آباد کے دامنِ کوہ چوک پر امریکی سفارت خانے کے ملٹری اتاشی کرنل جوزف ایمانوئل کی گاڑی کی ٹکر سے ایک نوجوان عتیق بیگ جاں بحق اور اس کا کزن راحیل شدید زخمی ہو گیا تھا۔

حادثے کے وقت امریکی سفارت خانے کے فوجی اتاشی جوزف امینوئل خود گاڑی چلا رہے تھے مگر پولیس نے گاڑی تحویل میں لی اور ان کو جانے دیا۔ چند ہفتے بعد اسی ملٹری اتاشی کی گاڑی نے 30 اپریل کو اسلام آباد کے ڈپلومیٹک انکلیو کے قریب ریڈیو پاکستان چوک پر ایک اور موٹر سائیکل کو ٹکر مارکر ایک نوجوان کو زخمی کردیا تھا۔

زخمی ہونے والے نوجوان کا نام نزاکت اعوان اور وہ مظفرآباد کا رہائشی تھا۔ نزاکت اعوان اسلام آباد کی سپر مارکیٹ میں واقع مسجد کا نائب خطیب تھا۔ حادثے کے وقت گاڑی امریکی سفارت خانے کا سیکنڈ سیکریٹری چاڈ ریکس آسبرن چلا رہا تھا۔

اس نوعیت کا سب سے معروف اور متنازع کیس ریمنڈ ڈیوس کا ہے۔ ریمنڈ ڈیوس امریکا کی خفیہ ایجنسی سی آئی اے کیلئے کام کرتا تھا اور اس نے 27 جنوری 2011 کو لاہور میں دو افراد محمد فہیم اور فیضان حیدر  کو فائرنگ کرکے قتل کردیا تھا۔

پولیس نے ریمنڈ ڈیوس کو گرفتار کر کے ان کے خلاف دفعہ 302 کے تحت مقدمہ درج کر لیا۔ اسی وقت لاہور میں امریکی قونصل خانے سے ایک گاڑی انہیں چھڑوانے کے لیے آئی اور نے سڑک کے غلط طرف گاڑی چلاتے ہوئے ایک موٹر سائیکل سوار کو ٹکر مار دی اور یوں اس واقعے میں ہلاکتوں کی تعداد تین ہو گئی۔

مقتولین کے ورثا کو کچھ دنوں کے بعد دیت کی رقم ادا کرکے رات کے اندھیرے میں ریمنڈ ڈیوس کو لاہور کی جیل سے نکال کر امریکا بھجوا دیا گیا۔

WhatsApp FaceBook

آپ کے تبصرے

Your email address will not be published.

متعلقہ خبریں
WhatsApp FaceBook
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube