Sunday, November 28, 2021  | 22 Rabiulakhir, 1443

کے پی وزیراعلیٰ کیخلاف سازش،3 وزرا برطرف

SAMAA | - Posted: Jan 26, 2020 | Last Updated: 2 years ago
SAMAA |
Posted: Jan 26, 2020 | Last Updated: 2 years ago

وزرا کے پاس، کھیل، ریوینو اورصحت کی وزارتیں تھیں

وزیراعلیٰ خیبر پختونخوا کے خلاف اپنے ہی وزرا کی سازشیں بے نقاب ہوگئیں۔ صوبائی کابینہ میں شامل 3 وزرا کو عہدوں سے ہٹا دیا گیا ہے۔

خیبر پختونخوا حکومت کی جانب سے جاری کیے گئے اعلامیے میں کہا گیا ہے کہ فارغ کیے جانے والے وزاراء میں شہرام ترکئی، عاطف خان اور شکیل احمد شامل ہیں۔ شہرام ترکئی وزیرِ صحت، عاطف خان سینیر وزیرِ کھیل، ثقافت اور سیاحت جب کہ شکیل احمد وزیرِ ریونیو اور اسٹیٹ تھے۔

اعلامیے میں یہ بھی کہا گیا ہے کہ گورنر خیبر پختونخوا شاہ فرمان نے تینوں صوبائی وزراء کو ڈی نوٹیفائی کیا ہے۔ ذرائع کے مطابق تینوں وزراء پریشر گروپ کے کرتا دھرتا تھے۔

برطرف وزیر شکیل احمد کا ردعمل

سما سے خصوصی گفتگو میں شکیل احمد نے کہا کہ عمران خان کا جو فیصلہ ہوگا، ہمیں منظور ہوگا۔ ہمیں عوام نے اچھے منشور کے نام پر ووٹ دیا، اس کا پاس رکھیں گے۔ ہم عمران خان کے ویژن کے ساتھ ہیں۔ عمران خان کا جو فیصلہ ہوگا وہ سر آنکھوں پر ہوگا۔ انہوں نے مزید کہا کہ ہمارا نہ وزیراعلیٰ سے اختلاف ہے نہ پارٹی سے۔ شکیل احمد نے بتایا کہ میں اپنے حلقے میں ہوں، میرا شہرام اور عاطف سے کوئی رابطہ نہیں ہوا اس خبر کے بعد۔ آخری بار دونوں سے دو روز قبل بات ہوئی تھی۔ وزارت ہمارے لیے کوئی مسئلہ نہیں ہے۔

اختلافات کے باوجود عمران خان کیساتھ ہوں

شکیل احمد نے اپنی پوزیشن واضح کرتے ہوئے کہا کہ وزارت آنی جانی چیز ہے، ہمارا نقطہ نظر پوری طرح سے سب کے سامنے ہیں۔ ہم کبھی پارٹی کے منشور اور قوانین کے خلاف نہیں جائی گے، ہم عمران خان کے ساتھ تھے ، ہیں اور رہیں گے۔

انہوں نے دعویٰ کرتے ہوئے کہا کہ بیورو کریسی میں کچھ ایسے لوگ بیٹھے ہیں جو کرپشن کرتے ہیں اور پیسے لے کر کام کرتے ہیں۔ میں مناسب وقت میں میڈیا کے سامنے ساری تفصیلات لاؤں گا۔

بیورو چیف کے پی سما طارق آفاق

کے پی بیورو چیف سما طارق آفاق کے مطابق وزیراعلیٰ محمود خان کے عہدے پر فائز ہوتے ہی ان کے خلاف سازشیں شروع کردی گئی تھیں، جس کی شکایات وقتاً فوقتاً وزیراعظم عمران خان کو بھی ملتی رہیں تھیں۔ تاہم ان لوگوں کے خلاف کارروائی میں تاخیر کی مختلف وجوہات تھیں۔

وزیرِاطلاعات شوکت یوسف زئی

وزیرِ اطلاعات شوکت یوسف زئی کا خبر سے متعلق کہنا ہے کہ خیبر پختونخوا سے تین وزراء کو فارغ کیا گیا ہے۔ انہوں نے مزید کہا ہے کہ فارغ کیے گئے ان تینوں میں ایک وزیر وزارتِ اعلیٰ کے امیدوار بھی تھے۔ شوکت یوسف زئی کا یہ بھی کہنا ہے کہ گروپ بندی پر اگر پارٹی خاموش رہتی ہے تو مسائل پیدا ہوتے ہیں۔

انہوں نے مزید بتایا کہ جو حکومت کا فیصلہ تھا وہ سامنے آگیا، پارٹی نے جو فیصلہ کرنا ہے اس سے بھی میڈیا کو آگاہ کردیا جائے گا۔

WhatsApp FaceBook
تازہ ترین
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube