ہوم   > پاکستان

پارک لین ریفرنس،ملزمان پرآج فردِ جُرم عائدنہ ہوسکی

SAMAA | - Posted: Jan 22, 2020 | Last Updated: 4 months ago
SAMAA |
Posted: Jan 22, 2020 | Last Updated: 4 months ago

پارک لین ریفرنس میں احتساب عدالت آج ملزمان پر فردِ جُرم عائد نہ ہوسکی۔ 

بدھ کو آصف زرداری اور فریال تالپور کیخلاف اہم ریفرنس کی سماعت کے موقع پر سیکورٹی کے سخت انتظامات تھے۔ منی لانڈرنگ اور پارک لین ریفرنس کی سماعت جج اعظم خان نے کی۔  پارک لین ریفرنس میں عدالت نے آج فردِ جُرم کی تاریخ مقرر کر رکھی تھی تاہم ملزمان کی عدم پیشی کے باعث ایسا نہ ہوسکا۔ عدالت نے پارک لین ریفرنس کے تمام ملزمان کو آج حاضری یقینی بنانے کی ہدایت کی تھی۔

جج نے استفسار کیا کہ انور مجید کو ائیر ایمبولینس سے لانے کا پہلے بھی کہا تھا، اس کا کیابنا؟ نیب پراسیکیوٹر نے بتایا کہ نیب کے پاس ایئر ایمبولینس موجود نہیں، ایئر ایمبولینس کے لئے نیب ہیڈ کوارٹرز کو لکھا ہے۔

تفتیشی افسر نے بتایا کہ ریفرنس میں4 ملزمان کے ناقابلِ ضمانت وارنٹ گرفتاری جاری ہیں،چاروں ملزمان بیرون ملک روپوش ہیں۔عدالت نے آصف زرداری کے وکیل فاروق ایچ نائیک کی جانب سے سابق صدر کی حاضری سے استثنیٰ کی درخواست منظور کرلی۔عدالت نے پارک لین ریفرنس کی سماعت 11فروری تک ملتوی کردی۔ واضح رہے کہ فریال تالپور پارک لین ریفرنس میں ملزمہ نہیں ہیں۔

نیب نے سابق صدر کے خلاف پارک لین ریفرنس جولائی 2019 میں  دائر کیا تھا جس میں عبدالغنی مجید اور انور مجید سمیت 17 دیگر ملزمان بھی نامزد کئے گئے نیب کے مطابق پارتھینون کمپنی کے نام پرڈیڑھ ارب روپے قرض لیا، پارک لین کے نام پر بے نامی جائیداد بنائی، دونوں کمپنیوں کا سارا عملہ ایک ہے، آصف زرداری پارک لین کے 25 فیصد شئیر کے مالک خود، 25 فیصد شئیرز ان کے بیٹے بلاول کے نام ہیں۔

نیب کے مطابق پارتھینون کے نام پر لیا گیا قرض ڈیڑھ ارب سے 4 ارب تک پہنچ چکا ہے، قرض واپس نہ کرنے پر پارتھیننون ڈیفالٹ کرچکی ہے، آئی بی سی سینٹر کراچی کے 7 فلور اسی کی ملکیت ہیں جو نیب نے سیل کردیے۔

ریفرنس میں ملزمان کو نیب آرڈیننس کے تحت سزا دینے کی استدعا کی گئی ، آصف زرداری کے علاوہ دیگر ملزمان میں عبدالغنی مجید اور انور مجید بھی شامل ہیں۔

نیب نے یکم جولائی 2019 کو جعلی اکاؤنٹس کیس کے بعد پارک لین کیس میں بھی سابق صدر آصف زرداری کو گرفتار کیا تھا اور اس سے قبل وہ جعلی بینک اکاؤنٹس ریفرنس کے اے ون انٹرنیشنل کیس میں گرفتار تھے۔

WhatsApp FaceBook

آپ کے تبصرے

Your email address will not be published.

متعلقہ خبریں
WhatsApp FaceBook
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube