Saturday, July 4, 2020  | 12 ZUL-QAADAH, 1441
ہوم   > پاکستان

برفباری سےوادی نیلم میں جاں بحق افرادکی تعداد69،بلوچستان میں25

SAMAA | - Posted: Jan 15, 2020 | Last Updated: 6 months ago
SAMAA |
Posted: Jan 15, 2020 | Last Updated: 6 months ago

برفانی تودوں کے باعث وادی نیلم میں درجنوں مکانات اور دکانیں تباہ ہونے سے جاں بحق افراد کی تعداد 69 ہوچکی ہے جبکہ متعدد افراد اب بھی لاپتہ ہیں۔ 

آزاد کشمير کی وادی نیلم کے علاقہ سرگن میں برفانی تودے گرنے سے ہر طرف تباہی کا منظر ہے۔ مکانات اور دکانيں سب برف تلے دب گئے۔

پاک فوج ، ريکسيو 1122 اور ايس ڈی ايم اے کو راستے خراب ہونے کی وجہ سے امدادی کارروائيوں ميں مشکلات کا سامنا ہے۔ جس کے باعث مقامی افراد نے خود ہی برف کے نيچے دبے لوگوں کو نکالنا شروع کيا۔

راستے بند ہونے کے باعث امدادی کاموں میں مشکلات کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے جبکہ بجلی اور مواصلاتی نظام بھی درہم برہم ہے۔

سياسی و عسکری قيات نے ملک ميں بارش اور برفباری کے باعث بڑے پيمانے پر انسانی جانوں کے ضیاع پر افسوس کا اظہار کيا ہے۔

وادی نیلم میں جاں بحق افراد کی تعداد 62 ہوگئی

دوسری جانب بلوچستان میں برفباری کا 30 سالہ ریکارڈ ٹوٹ گیا۔ چار روز کے دوران بارش، برفباری اور دم گھٹنے کے باعث 25 افراد جاں بحق اور ڈپٹی کمشنر مستونگ سمیت 32 افراد زخمی ہوگئے۔ متعدد مقامات پر رابطہ سڑکیں بند ہيں۔

برفباری کے بعد مختلف راستے اب بھی بند ہيں۔ بادينی کراس، کان مہترزئی اور ديگر علاقوں ميں سيکڑوں گاڑياں راستہ نہ ہونے کی وجہ سے کھڑی ہيں۔

قلات شہر اور گردنواح ميں درجہ حرارت منفی13 ڈگری تک گرگيا۔ تين دن ميں 3 فٹ سے زائد برف پڑی ہے۔ بلوچستان حکومت کی جانب سے مختلف علاقوں ميں ہیلی کاپٹر کی مدد سے راشن اور ديگر سامان فراہم کيا جارہا ہے۔

آرمی چيف جنرل قمر جاويد باجوہ نے آزاد کشمیر اور بلوچستان کے غمزدہ خاندانوں سے اظہار تعزیت کرتے ہوئے ریسکیو اور 2 ریلیف آپریشن میں سول انتظامیہ کی معاونت کرنے کی ہدایت کر دی۔

برطانیہ نے بھی متاثرین کی مدد کی پیشکش کر دی۔ برطانوی ہائی کمشنر کرسٹین ٹرنر نے متاثرین سے اظہار ہمدردی کرتے ہوئے کہا برطانوی امدادی ادارہ این ڈی ایم اے کے ساتھ رابطے میں ہے۔

WhatsApp FaceBook

آپ کے تبصرے

Your email address will not be published.

متعلقہ خبریں
WhatsApp FaceBook
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube