ہوم   > پاکستان

پشاور: سکھ نوجوان کومنگیترنےقتل کروایا، پولیس

SAMAA | - Posted: Jan 10, 2020 | Last Updated: 2 months ago
SAMAA |
Posted: Jan 10, 2020 | Last Updated: 2 months ago

سکھ نوجوان پروندرسنگھ کے قتل کا معمہ حل ہوگیا، قاتل نوجوان کی منگیتر پریم کماری نکلی جو اس منگنی سے خوش نہیں تھی۔

شانگلہ کے علاقہ چکیسرسے تعلق رکھنے والے 25 سالہ نوجوان پروندرسنگھ کو 5 جنوری کو پشاورمیں سرمیں گولی مارکرقتل کیا گیا تھا جس کی لاش اتوارکی شام آبائی گاؤں پہنچائی گئی تھی۔

ایک ہفتے کی تحقیقات کے بعد پولیس قاتلوں تک جاپہنچی ۔ رویندرسنگھ کوکسی اورنے نہیں بلکہ اس کی منگیتر پریم کماری نے 4 اجرتی قاتلوں کے ہاتھوں مروایا ۔ پولیس کے مطابق ملزمہ اس منگنی سے ناخوش تھی رشتہ ختم کرنا چاہتی تھی ،ملزمہ نے پروندر کا قتل کرنے کیلئے7 لاکھ روپے دیے۔

پولیس کے مطابق ملزمہ پریم کماری نے رویندرسنگھ کو مردان میں اپنی سہیلی کے گھرآنے کے بہانے بلایا تھا جہاں کرائے کے قاتلوں نے اسے اغواکرکے قتل کردیا اورجرم کوچھپانے کےلیے لاش پشاورکے علاقہ چمکنی میں جی ٹی روڈ پر پھینک دی ۔

پولیس نے آلہ قتل اور استعمال ہونے والی گاڑی بھی برآمد کرلی جبکہ ملزمہ کو کل عدالت کے روبرو پیش کیا گیا تھا جہاں سے اسے جیل بھجوا دیا گیا ہے۔

خیبر پختونخوا کے ضلع شانگلہ میں مقامی لوگوں نے سکھ نوجوان کے قتل کے خلاف احتجاجی مظاہرہ کرتے ہوئے مطالبہ کیا تھا کہ ملزمان کو جلد از جلد گرفتار کرکے قرار واقعی سزا دی جائے تاکہ اقلیتی برادری میں عدم تحفظ کا تاثر ختم ہوجائے۔

پروندر سنگھ کے ایک بھائی ہرمیت سنگھ صحافی ہیں جنہوں نے میڈیا سے گفتگو میں کہا تھا کہ ہماری کسی سے کوئی دشمنی نہیں تھی۔ میرا بھائی پروندر سنگھ ملائیشیا میں کپڑے کاروبار کرتا تھا اور چند روز قبل شادی کیلئے پاکستان آیا تھا۔ پروندر سنگھ فروری میں طے پانے والی شادی کی شاپنگ کے لیے ہی پشاور گیا تھا۔

WhatsApp FaceBook

آپ کے تبصرے

Your email address will not be published.

متعلقہ خبریں
WhatsApp FaceBook
 
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube