Friday, August 14, 2020  | 23 Zilhaj, 1441
ہوم   > پاکستان

جج ویڈیواسکینڈل، ہائیکورٹ شواہد کے مطابق فیصلہ کرے،چیف جسٹس

SAMAA | - Posted: Dec 10, 2019 | Last Updated: 8 months ago
SAMAA |
Posted: Dec 10, 2019 | Last Updated: 8 months ago

سپریم کورٹ نے ایک بار پھر واضح کردیا ہے کہ اسلام آباد ہائی کورٹ جج ارشد ملک ویڈیو اسکینڈل سے متعلق نظرثانی کیس پر کسی آبزرویشن سے متاثر ہوئے بغیر شواہد کے مطابق فیصلہ کرے۔

سماعت کے دوران چیف جسٹس آصف سعید کھوسہ نے فیصلے سے متعلق تبصروں پر برہمی کا اظہار کرتے ریمارکس دیے ’کہا گیا کہ ہائیکورٹ کے ہاتھ باندھ دیئے گئے۔ فریقین کو نوٹس جاری نہیں کئے۔

چیف جسٹس نے کہا کہ درخواستیں منظور ہی نہیں کیں تو نوازشریف کو نوٹس کیوں جاری کرتے۔ پہلے بھی فیصلے میں واضح لکھا تھا اسلام آباد ہائیکورٹ جو مناسب طریقہ سمجھے اختیارکرے۔ ویڈیو کی تحقیقات اور کمیشن بنانے کا معاملہ ہائی کورٹ، حکومت اور ایف آئی اے پر چھوڑا تھا۔

چیف جسٹس نے ریمارکس دیئے کہ جب بھی کچھ ہوتا ہے تو سوموٹو لینے کا کہا جاتا ہے۔ عدالتیں کھلی ہیں جسے مسئلہ ہو وہ درخواست دائر کر دے۔ ججز کسی کے ساتھ نا انصافی نہیں کرتے۔ جو فیصلہ بھی ہو گا میرٹ پر ہوگا۔

دوران سماعت میاں نواز شریف کے وکیل خواجہ حارث کا کہنا تھا کہ چیف جسٹس کے ریمارکس کے بعد میرے بولنے کی گنجائش ہی نہیں بچی۔

WhatsApp FaceBook

آپ کے تبصرے

Your email address will not be published.

متعلقہ خبریں
WhatsApp FaceBook
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube