ہوم   >  پاکستان

کراچی:گٹکے کی فروخت سےمتعلق قانون سازی نہ ہونےپر عدالت برہم

SAMAA | - Posted: Dec 10, 2019 | Last Updated: 1 month ago
SAMAA |
Posted: Dec 10, 2019 | Last Updated: 1 month ago

سندھ ہائیکورٹ میں گٹکا بنانے اور فروخت کرنے والوں کيخلاف قانون سازی نہ کرنے پر عدالت نے سخت برہمی کا اظہار کیا،آئی جی نے بھی رپورٹ پيش نہ کی،عدالت نے ريمارکس ديے کہ قانون سازی نہيں کرنی تو بتاديں۔

سندھ ہائی کورٹ میں گٹکے کی تیاری اور خرید و فروخت پر پابندی سے متعلق درخواست پر سماعت ہوئی۔ دوران سماعت عدالت نے سندھ حکومت کی سست سست روی پر سخت برہمی کا اظہار کیا ، عدالت نے کہا کہ گٹکا بنانے اور بيچنے والوں کی سزا کيا ہوگی اب تک قانون سازی کيوں نہيں کی گئی۔

عدالت نے فوکل پرسن سے استفسار کيا کہ قانون سازی نہیں کرناچاہتے تو بتادیں، فوکل پرسن نے عدالت کو بتايا کہ قانون بنانے کیلئے معاملہ کابینہ کوبھیج دیاہے تاہم اس میں مہلت دی جائے۔

عدالت نے گٹکےبنانےاورفروخت کرنےوالوں کيخلاف کارروائی جاری رکھنے اورسزا سے متعلق فوری قانون بنانے کا حکم دے ديا۔

کارروائی سے متعلق رپورٹ پیش نہ کرنے پرعدالت نے آئی جی سندھ پر اظہار برہمی کيا، استفسار کيا کہ آئی جی کی جانب سے کیا کارروائی کی جارہی ہے؟ وکيل کے مطابق ڈی آئی جی ايسٹ کے علاوہ کوئی مؤثر کارروائی نہيں کررہا، عدالت نے پندرہ جنوری کو پیش رفت کی رپورٹ طلب کرلی۔

یاد رہے کہ گزشتہ ماہ سندھ ہائیکورٹ نے سندھ حکومت کو گٹکے بنانے اور فروخت کرنے کی سزا سے متعلق قانون سازی کیلئے 10 دسمبر آج تک کی مہلت دی تھی ۔

 

آپ کے تبصرے

Your email address will not be published.

 
متعلقہ خبریں
 
 
 
 
 
 
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube