ہوم   >  پاکستان

ٹریفک پولیس سےبدتمیزی کرنے والی خاتون کیخلاف مقدمہ درج

1 week ago

گاڑی پیرروشن دین شاہ راشدی کے نام پررجسٹرڈ ہے

کراچی ميں سگنل توڑنے کے بعد ٹریفک پولیس کے روکنے پر بدتمیزی کا مظاہرہ کرنے والی خاتون کے خلاف مقدمہ درج کرلیا گیا ۔

کار سرکار میں مداخلت کا مقدمہ درخشاں تھانے میں مدعی سب انسپکٹرنواز سیال کی مدعیت میں درج کیا گیا جنہیں خاتون نے ہتک آمیز اور نازیبا کلمات کہےتھے۔ نوازسیال سی ویو ٹریفک پولیس چوکی کے سیکشن آفیسرہیں۔

ایکسائزڈیپارٹمنٹ کی ویب سائٹ کے مطابق خاتون کے زیراستعمال گاڑی سفید رنگ کی ٹویوٹا کرولا گاڑی پیر روشن دین شاہ راشدی کے نام پررجسٹرڈ ہے جس کا پتہ حیدرآباد کے علاقے قاسم آباد کا ہے۔

پولیس کی جانب سے گاڑی کا چالان کاٹنے کے بعد مذکورہ پتے پر بھیج دیا گیا ہے۔

خاتون نے گزشتہ روز ڈیفنس کے علاقے میں خیابان شہباز پر سگنل توڑا تھا۔ پولیس نے پیچھا کرکے چالان کرنا چاہا تو خاتون نے آپے سے باہر ہوتے ہوئے ٹریفک اہلکاروں کے ساتھ انتہائی بدتمیزی کی۔

واقعہ کی ویڈیو سوشل میڈیا پروائرل ہوئی جو خاتون کی جانب سے انتہائی نازیبا الفاظ استعمال کرنے کے باعث نشرکرنے کے قابل نہیں۔

جب پولیس اہلکارنے خاتون سے لائسنس مانگا تو اس نے جواب دیا میرے پاس لائسنس نہیں ہے۔ ابھی تم کو بتاتی ہوں۔ مُکا مار کر تمہارا منہ توڑ دوں گی، گاڑی سے ماردیتی تو اچھا ہوتا۔ خاتون نے پولیس اہلکار کو دو ٹکے کا بھی کہا۔

 
TOPICS:

آپ کے تبصرے

Your email address will not be published.

 
متعلقہ خبریں
 
 
 
 
 
 
 
Karachi, traffic police, road rage