Thursday, October 22, 2020  | 4 Rabiulawal, 1442
ہوم   > پاکستان

ہنگو میں پوری بستی کو نوٹس،سرکاری اراضی قرار

SAMAA | - Posted: Nov 24, 2019 | Last Updated: 11 months ago
SAMAA |
Posted: Nov 24, 2019 | Last Updated: 11 months ago

علاقہ مکینوں کا احتجاج

خیبر پختونخوا حکومت نے جنوبی ضلع ہنگو کے تحصیل ٹل کے نواحی علاقہ چھپری وزیران میں 600 سے زائد گھروں کو نوٹس جاری کرتے ہوئے کہا ہے کہ یہ تمام آبادی سرکاری اراضی پر قائم ہے جبکہ علاقے میں مزید تعمیرات پر پابندی عائد کردی گئی ہے۔

حکومتی اقدام کے خلاف علاقہ مکینوں نے اتوار کو احتجاجی مظاہرہ اور گرینڈ جرگہ کا انعقاد کیا جس میں عوامی نمائندوں سمیت علاقہ مکینوں نے کثیر تعداد میں شرکت کی۔

مظاہرین کا کہنا تھا کہ انگریز دور میں وضع شدہ 1881 کے ریکارڈ میں مذکورہ اراضی کو سرکاری قرار دیا گیا تھا۔ اس کے بعد یہاں مقامی لوگوں نے آبادی بنائی اور اب ڈیڑھ صدی بعد حکومت کو انگریز کا قانون یاد آیا اور اپنے عوام کو بے گھر بنانے کا منصوبہ بنایا ہے۔

انہوں نے کہا کہ قبائل محب وطن پاکستانی ہیں جنہوں نے تحریک آزادی سے لیکر دہشت گردی کے خلاف جنگ تک ہر موقع پر قربانیاں پیش کیں مگر ہماری اپنی حکومت ہمارے ساتھ امتیازی سلوک کر رہی ہے۔

مظاہرین نے کہا کہ تعمیرات مسمار کرنے اور تعمیرات پر پابندی کے فیصلے کو یکسر مسترد کرتے ہیں۔ ضلع ہنگو کے ایم این اے اور اراکین اسمبلی اپنی ذمہ داریاں نبھاتے ہوئے چھپری وزیران کے عوام کو مالکانہ حقوق دینے کیلئے اسمبلی کے فلور پر آواز اٹھائیں۔

مظاہرین رہنماوں نے خبردار کیا کہ اگر حکومت نے ظالمانہ فیصلے کا اطلاق کیا تو مجبورا پارلیمنٹ ہاوس اور صوبائی اسمبلی کے سامنے احتجاج اور دھرنا دیں گے۔

WhatsApp FaceBook

آپ کے تبصرے :

Your email address will not be published.

متعلقہ خبریں
WhatsApp FaceBook
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube