ہوم   >  پاکستان

نوازشریف کوبیرون ملک جانے کی غیرمشروط اجازت مل گئی

3 weeks ago

لاہورہائیکورٹ نے حکومت کی جانب سے عائدکردہ شرائط معطل کردیں

لاہور ہائی کورٹ نے سابق وزیراعظم نوازشریف کو4 ہفتوں کے لیےبیرون ملک جانے کی اجازت دیتے ہوئے ان کا نام ای سی ایل سے نکالنے کا حکم جاری کردیا ہے، حکومت کی جانب سے عائد کردہ شرائط معطل کردی گئیں۔ عدالت نے یہ بھی منظور کرلیا ہے کہ اگر دورانِ علاج نوازشریف کی صحت بہتر نہیں ہوتی تو اس مدت میں توسیع ہوسکتی ہے۔ اپوزیشن لیڈر شہبازشریف بھی ان کے ہمراہ بیرون ملک جا سکتے ہیں۔

 ہفتے کی شام جاری ہونے والےعدالتی فیصلے میں بتایا گیا ہے کہ شہبازشریف اور نوازشریف نے انڈر ٹیکنگ دی ہے، نواز شریف کو علاج کيلئے ملک سے باہر جانے کی اجازت دے رہے ہیں،عدالت میں دی گئی انڈرٹیکنگ پرعمل نہ ہوا تو توہین عدالت ہوسکتی ہے۔

نوازشریف کے جسم پرسوجن،سائڈ ایفیکٹس میں اضافہ ہوگیا،مريم

عدالتی حکم کے مطابق نوازشریف کا نام ای سی ایل سے خارج کرنے کا حکم جاری کرتے ہوئے انھیں علاج کے لیے بیرون ملک جانے کی اجازت دی گئی ہے۔ یہ اجازت 4 ہفتے کيلئے ہوگی جس میں توسیع ہوسکتی ہے۔ عدالتی فيصلے میں یہ بھی درج ہے کہ شہباز شريف کو بھائی کيساتھ جانے کی اجازت ہوگی۔

نوازشریف کی اجازت کامعاملہ،شہبازشریف کابیان حلفی جمع

فيصلہ آنے کے بعد میڈیا سے بات کرتے ہوئے شہبازشریف نے کہا کہ انسانی بنيادوں پر عدالتوں نے فيصلہ ديا، حکومت کی شرط کا کوئی جوازنہیں تھا، عدالت نے حکومت کی شرط مسترد کردی ہے۔

عمران خان کےحامی چوروں کوچھوڑنانہیں چاہتے،شیخ رشید

شہباز شریف نے مزید کہا کہ پوری قوم کی دعائیں رنگ لائی ہیں، حکومت کی آخری رکاوٹ بھی دور ہوگئی ہے، اللہ کے فضل وکرم سے نوازشریف کا علاج ممکن ہوگا۔

مریم نواز نے کہا ہے کہ باہر جانے کی تیاری مکمل ہے اور سامان تیار ہے۔ حسین نواز کا کہنا ہے کہ ايئرايمبولينس کمپنی سےرابطہ کرلیا ہے، کلیئرنس سرٹيفکيٹ جلدی آجائے گا۔

پی ٹی آئی رہنماء بابر اعوان نے کہا ہے کہ عدالتی فیصلہ قبول ہے،کوئی اپیل نہیں کریں گے،عدالتی فیصلہ کسی کی فتح یاشکست نہیں۔ انھوں نے واضح کیا کہ نوازشريف کے صادق اور امين نہ ہونے کا فيصلہ ختم نہيں ہوا،حکومت کا فیصلہ100 فیصد درست تھا،عدالت نے اپنا اختیار استعمال کیا۔

 

آپ کے تبصرے

Your email address will not be published.

 
متعلقہ خبریں