ہوم   >  پاکستان

یونیورسٹی میں طلبہ گروپس کا مسلح تصادم، 4 زخمی

SAMAA | - Posted: Nov 15, 2019 | Last Updated: 2 months ago
SAMAA |
Posted: Nov 15, 2019 | Last Updated: 2 months ago

منڈی بہاء الدین میں یونیورسٹی آف انجنیئرنگ اینڈ ٹیکنالوجی کے اندر دو طلبہ گروپس کے درمیان تصادم کے دوران فائرنگ سے 4 افراد زخمی ہوگئے۔ ایک زخمی کو تشویشناک حالت میں لاہور منتقل کردیا گیا۔

منڈی بہاءالدین کے علاقہ رسول میں واقع یونیورسٹی آف انجنیئرنگ اینڈ ٹیکنالوجی میں جمعہ کی صبح دو طلبہ گروہ آمنے سامنے آگئے اور بات تلخ کلامی سے ہوتے ہوئے اسلحہ کے استعمال تک جا پہنچی۔

پولیس کے مطابق یونیورسٹی کے اندر طلبہ کی گروہ بندی چل رہی ہے جس میں ایک مقامی گروپ ہے جبکہ دوسرا مونگ گروپ کے نام سے معروف ہے۔ ان کے درمیان پہلے سے جھگڑے ہوتے رہتے ہیں۔

جمعہ کو کلاسز کے دوران جب ایک گروہ کے کچھ لوگ کلاس ختم کرکے باہر نکلے تو دوسرے گروپ نے ان پر فائرنگ کردی جس میں 4 طالب علم زخمی ہوگئے۔ ان میں سے تھرڈ ائیر کے طالب علم ارحم کو شدید زخمی حالت میں لاہور ریفر کردیا گیا جبکہ دیگر کا مقامی اسپتالوں میں علاج جاری ہے۔

واقعہ کے بعد طلبہ نے یونیورسٹی کے اندر احتجاج کرتے ہوئے ایڈمن بلاک پر دھاوا بولا اور توڑ پھوڑ کی۔ طلبہ نے الزام عائد کیا کہ یونیورسٹی انتظامیہ سب کچھ جانتے ہوئے اس طرح کے واقعات کی روک تھام کیلئے اقدامات کرنے کے بجائے خاموش تماشائی ہے۔

یاد رہے کہ ایک سال کے دوران طلباء گروپس میں تصادم کے نتیجہ میں دو طالب علم جاں ہلاک اور متعدد زخمی ہوچکے لیکن انتظامیہ کی جانب سے طلباء میں گروپ بندی کے خاتمے کے لئے موثر اقدامات نہیں کئے گئے۔

 

آپ کے تبصرے

Your email address will not be published.

 
متعلقہ خبریں
 
 
 
 
 
 
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube