ہوم   >  پاکستان

تنازع کا حصہ بننے کے بجائے مصالحانہ کردار اداکرناہوگا، وزیراعظم

3 weeks ago

وزیراعظم عمران خان کہتے ہیں کہ اب کسی بھی عالمی تنازع کا حصہ بننے کے بجائے مصالحانہ کردار ادا کرنا ہوگا، امریکا نے کئی ٹریلین ڈالر جنگوں میں جھونک دیئے اس کے برعکس چین نے عوام کی ترقی پر پیسہ خرچ کیا۔

اسلام آباد میں بین الاقوامی کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے وزیراعظم عمران خان نے کہا کہ پاکستان نے دہشتگردی کیخلاف صف اول کا کردار ادا کیا، دہشتگردی کیخلاف جنگ پاکستان کیلئے تباہ کن ثابت ہوئی، ہمارا بہت زیادہ نقصان ہوا، پاکستان نے بڑی قربانیاں دیں، ہم چین اور امریکا سے سبق حاصل کرسکتے ہیں، امریکا نے کھربوں ڈالر جنگ میں جھونک دیئے، اس کے برعکس چین نے پچھلے 20 سال میں اپنی توجہ عوامی ترقی پر رکھی۔

وزیراعظم نے کہا کہ اب کسی بھی عالمی تنازع کا حصہ بننے کے بجائے مصالحانہ کردار ادا کرنا ہوگا، سعودی عرب نے ہر کڑے وقت میں پاکستان کا ساتھ دیا اور ہم کبھی بھی نہیں چاہتے کہ ایران اور سعودی عرب کے درمیان تنازع ہو، ایران ہمسایہ ملک ہے، چاہتے ہیں کہ ایران سعودی عرب تنازع ختم ہو، امریکا سے تنازع حل ہوا تو ایران ایک طاقت کے طور پر ابھر سکتا ہے، پاکستان اپنے پڑوس میں امن کیلئے کوششیں کررہا ہے، کوشش ہے کہ پاکستان کے پڑوس میں مزید تنازعات نہ ہوں، اب ہم کسی جنگ کا حصہ نہیں بنیں گے۔

عمران خان کا مزید کہنا تھا کہ پاکستان کو دنیا بھر کیلئے کھول رہے ہیں، کاروبار کے مواقع آسان بنانے کی کوششیں کررہے ہیں، غیر ملکی سرمایہ کاروں کیلئے ویزا میں نرمی کررہے ہیں، پاکستان میں امن کے بعد انٹرنیشنل کرکٹ لوٹ آئی ہے۔

انہوں نے کہا کہ ہمارا سب سے بڑا مسئلہ بھارت ہے، ہندوتوا کے نظریے سے سب سے زیادہ نقصان بھارت کو ہوگا، آر ایس ایس نظریہ بھارت میں مسلمانوں اور دیگر اقلیتوں کیلئے خطرہ ہے، آج بھارت میں نسل پرستی کیخلاف کوئی بات نہیں کرسکتا، بھارتی میڈیا بھی خاموش ہے، بھارت میں نفرت کا پرچار کرنیوالوں کی حکمرانی ہے۔

عمران خان کہتے ہیں کہ مسائل کے حل کی کئی کوششیں کیں، اب بھارت کی طرف دوستی کا ہاتھا بڑھانا مشکل ہوگیا ہے، مودی نے کشمیریوں کو دیوار سے لگا رکھا ہے، مقبوضہ کشمیر میں 8 لاکھ فوج دہشت پھیلانے کیلئے رکھی گئی ہے، کرفیو کو 100 دن سے زائد گزر گئے، مودی حکومت کشمیریوں کو طاقت کے زور پر نہیں دبا سکتی، بھارتی میڈیا بھی نسل پرستی کے باعث خاموش ہے ،آج بھارت میں نفرت کا پرچار کرنیوالوں کی حکمرانی ہے۔

وزیراعظم نے کہا کہ بھارت کی شدت پسندی کے نظریے کے خطر ناک نتائج نکل سکتے ہیں، دنیا کو سمجھنا ہوگا کہ کشمیر کے باعث خطے میں انتہائی کشیدگی ہے، مقبوضہ کشمیر میں خواتین اور بچے بھی بھارتی بربریت سے محفوظ نہیں، ہزاروں نوجوانوں کو جیل میں ڈالا گیا، مقبوضہ کشمیر میں انسانی حقوق کی بدترین خلاف ورزیاں کی جارہی ہیں، پاکستان کشمیر کی وجہ سے خطرے کی زد میں ہے۔

 

آپ کے تبصرے

Your email address will not be published.

 
متعلقہ خبریں
 
 
 
 
 
 
 
IMRAN kHAN, PTI, AFGHANISTAN, INDIA, CHINA, IRAN, SAUDI ARABIA, KASHMIR, MODI, ECONOMY, WAR