ہوم   >  پاکستان

حکومت کی تاوان کی شرط ہرگز منظور نہيں، شہباز شریف

3 weeks ago

 مسلم لیگ ن کے صدر شہباز شریف کہتے ہیں کہ حکومت انڈیمنٹی بانڈ کی آڑ میں تاوان لینا چاہتی ہے لیکن پارٹی کو سياسی تاوان کی شرط ہرگز منظور نہيں۔

لاہور میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے ن لیگی صدر نے کہا ایک طرف کہتے ہیں کہ جائیں علاج کروائیں اور دوسری طرف یہ تاوان لینا چاہتے ہیں تاکہ قوم کو یہ بتا سکے کہ یہ این آر او ہے۔ ساڑھے 7 ارب کا فیصلہ تاوان کے مترادف ہے۔

شہباز شریف نے کہا کہ کل کے فیصلے میں کہا گیا انڈیمنٹی بانڈ دیں پھرعلاج کےلیے باہر چلے جائیں لیکن نواز شریف، میں اور ہماری پارٹی اس مطالبے کو مسترد کرتی ہے۔ رات ہم نے فيصلہ کيا تھا فی الفورعدالت عاليہ کا دروازہ کھٹکٹائيں گے اور اس وقت ہماری ٹيم لاہور ہائی کورٹ ميں موجود ہے۔

ن لیگ کے صدر نے کہا کہ عمران خان انسانی مسئلے کو سیاست زدہ کر رہے ہیں۔ عمران خان این آر او دے سکتے ہیں اور نہ وہ لے سکتے ہیں۔ صحت، بیماری، زندگی اور موت اللہ تعالیٰ کے ہاتھ میں ہے اور نواز شريف بہت جرات سے حالات کا مقابلہ کر رہے ہيں۔

شہباز شریف نے کہا کہ 6 جولائی 2018 کو نواز شريف اور مريم نواز کےخلاف فيصلہ آيا۔ نواز شريف اس وقت اپنی بيمار اہليہ کی تيمارداری کر رہے تھے لیکن 13 جولائی کو وہ بيٹی کا ہاتھ تھام کر واپس آئے۔

انہوں نے سوال اٹھایا کہ کيا اس وقت نواز شريف نے کوئی شيورٹی بانڈ ديا تھا؟ اور اِس وقت کيوں شيورٹي بانڈ مانگا جارہا ہے؟ اس سے زيادہ خرابی اور گھٹيا بات کيا ہوسکتی ہے؟ نہ عدالت عاليہ نہ کسی اور عدالت نے شرط لگائی لیکن پھر بھی نواز شريف سے انڈيمنٹی بانڈ مانگا جارہا ہے۔

صدر ن لیگ نے کہا کہ پوری قوم نواز شريف کی صحت پر پريشان ہے جبکہ يہ حکومت صرف اپنی سياست کےلیے پريشان ہے۔ ملک کے ممتاز قانون دانوں نے حکومت کے اس فيصلے کی مذمت کی۔ نواز شريف کی صحت کو شٹل کاک بنا ديا گيا ہے۔ پچھلے چند دنوں ميں وزارت داخلہ اور نيب ايک دوسرے کی طرف گيند پھينکتے رہے۔

شہباز شریف نے بتایا کہ ڈاکٹر عدنان نے فون کيا کہ نواز شريف کے پليٹ لٹس 16 ہزار پر آگئے۔ ميں فوراً نيب پہنچا اور نواز شريف کو اسپتال منتقل کيا گيا جبکہ اگلے دن نواز شريف کے پليٹ ليٹس دو ہزار پر آگئے۔ يہ معجزہ ہے کہ 2 ہزار پليٹ ليٹس پر انہيں بليڈنگ نہيں ہوئی، يہ معجزہ ہے کہ اللہ تعالیٰ نے ان کی جان بچالی۔

انہوں نے مزید کہا کہ کراچی سے ڈاکٹر شمسی کو حکومت نے بلايا۔ ڈاکٹر نے لکھ کر ديا کہ ان کی صحت شديد خراب ہے اور کہا نواز شريف کو علاج کيلئے فی الفور باہر جانا چاہيئے۔

ن لیگی صدر کا کہنا تھا کہ عمران خان نيازی نے قوم کو گمراہ کرنے کی ايک اور سازش کی جو قوم کو دکھانے کےلیے پيپر دستخط کروانا چاہتے ہيں۔ عمران نيازی کہے گا ديکھو ميں نے کرپشن کا پيسہ نکلواليا لیکن يہ اصل ميں گھٹيا حرکت ہے۔

 

آپ کے تبصرے

Your email address will not be published.

 
متعلقہ خبریں
 
 
 
 
 
 
 
Shehbaz Sharif, Nawaz Sharif, pmln, indemnity bond, health, NAB, Imran Khan