Monday, August 3, 2020  | 12 Zilhaj, 1441
ہوم   > پاکستان

نوازشریف کو بیرون ملک جانے کی مشروط اجازت دینے کافیصلہ

SAMAA | - Posted: Nov 13, 2019 | Last Updated: 9 months ago
SAMAA |
Posted: Nov 13, 2019 | Last Updated: 9 months ago

حکومت نے سابق وزیراعظم نواز شریف کو 4 ہفتوں کیلئے ایک بار بیرون ملک جانے کی اجازت دینے کا فیصلہ کرلیا۔ فروغ نسیم کہتے ہیں کہ نواز شریف یا شہباز شریف 7 ارب روپے کے ضمانتی بانڈ جمع کرائیں گے، وفاق آج رات تک تحریری اجازت نامہ جاری کردے گا۔

سابق وزیراعظم نواز شریف کا نام ای سی ایل سے نکالنے کے معالے پر کابینہ کی ذیلی کمیٹی نے اپنا فیصلہ سنادیا۔ وفاقی وزیر قانون بیرسٹر فروغ نسیم نے بریس بریفنگ سے گفتگو کرتے ہوئے بتایا کہ مسلم لیگ ن کے سربراہ کو چار ہفتے کیلئے ایک بار بیرون ملک جانے کی اجازت دی جارہی ہے، نواز شریف یا شہباز شریف 7 ارب روپے کے ضمانتی بانڈ جمع کرائیں گے، ان سے بیل نہیں انڈیمنیٹی بانڈ مانگ رہے ہیں۔

ان کا مزید کہنا ہے کہ کابینہ کی ذیلی کمیٹی نے کئی میٹنگز کے بعد وفاقی کابینہ کو سابق وزیراعظم نواز شریف کی صحت سے متعلق رپورٹس کی روشنی میں بریفنگ دی، انہیں دل کے عارضے اور بلڈ پریشر کے ساتھ دیگر کئی بیماریاں لاحق ہیں، گزشتہ عرصے میں پلیٹ لیٹس کی تعداد بھی 30 ہزار تک رہ گئی ہے۔

یہ بھی پڑھیں : نوازشریف کی بیرون ملک روانگی پرشرائط رکھنادرست ہے،بابراعوان

فروغ نسیم نے بتایا کہ حالیہ رپورٹس پر وفاقی کابینہ کے اراکین نے نواز شریف کو بیرون ملک جانے کی اجازت دینے کی حمایت کی، تاہم کچھ اراکین نے اجازت کے بدلے ضمانتی بانڈ لینے کی تجویز دی، جس پر نواز شریف کے وکلاء اور رہنماؤں سے مشاورت ہوئی۔

وفاقی وزیر کا کہنا ہے کہ وفاقی حکومت تمام امور کو مدنظر رکھتے ہوئے آج ہی نواز شریف کو بیرون ملک جانے کی تحریری اجازت دیدے گی، نواز شریف کو بیرون ملک لے جانے سے متعلق فیصلہ ان کے اپنے لوگ کریں گے۔

فروغ نسیم نے کہا کہ ایل سی ایل 2010ء قوانین کے مطابق سزا یافتہ مجرم کا نام ایگزٹ کنٹرول لسٹ سے نہیں نکالا جاسکتا، ایک بار بیرون ملک جانے کی اجازت کا مطلب نام ای سی ایل سے نکالنا نہیں، ایسی پہلے بھی کئی مثالیں موجود ہیں۔

مزید جانیے : انسانی صحت پرسیاست غیراخلاقی بات ہے،شیخ رشید

وزیراعظم کے معاون خصوصی شہزاد اکبر نے پریس بریفنگ میں کہا کہ مسلم لیگ ن کو ضمانت دینا ہوگی کہ نواز شریف واپس آکر مقدمات کا سامنا کریں گے، سابق وزیراعظم کو 4 ہفتوں کی اجازت دینے میں کوئی سیاست نہیں، معاملے کو سیاسی نہیں، انسانی ہمدردی کے طور پر دیکھنا چاہئے۔

کابینہ کی ذیلی کمیٹی کی جانب سے نواز شریف کو 4 ہفتے کیلئے ایک بار بیرون ملک جانے کی اجازت دینے کے فیصلے کے بعد وزارت داخلہ نے حکومتی نوٹیفکیش جاری کردیا۔

وزارت داخلہ کے ای سی ایل سیکشن کی جانب سے جاری نوٹیفکیشن میں کہا گیا ہے کہ نواز شریف یا شہباز شریف کو 80 لاکھ پاؤنڈز یا اس کے مساوی پاکستانی روپے کے ساتھ ڈھائی کروڑ ڈالرز یا اس کے مساوی پاکستانی روپے کا بانڈ جمع کرانا ہوگا اور علاوہ ازیں  ڈیڑھ ارب پاکستانی روپے بھی فراھم کرنے ہوں گے۔

WhatsApp FaceBook

آپ کے تبصرے

Your email address will not be published.

متعلقہ خبریں
WhatsApp FaceBook
NAWAZ SHARIF, SHEHBAZ SHARIF, PMLN, ECL, FEDERAL CABINET SUB COMMITTEE, PM, IMRAN KHAN, CORRUPTION, NAB, FAROGH NASIM,
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube