ہوم   >  پاکستان

چترال، تہرے قتل میں ملوث مرکزی ملزم سمیت 4افراد گرفتار

1 week ago

چترال کے علاقے گرم چشمہ میں تہرے قتل میں ملوث مرکزی ملز سمیت 4 افراد کو گرفتا کرلیا جب کہ ملزمان سے آلہ قتل، گاڑی اور نقدی بھی برآمد کر لی۔

ہفتہ 9 نومبر کو ڈی پی او چترال وسیم ریاض خان نے پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا کہ گرم چشمہ کے رہائشی وقار احمد ولد عبدالمالک نے ایک سال قبل دیر کوہستان کے علاقے سے تسلیمہ سے ان کے والدین کی مرضی کےخلاف شادی کی تھی جس کا انہیں رنج تھا۔ انہوں نے شرینگل دیر اَپر سے اجرتی قاتل عطاء الرحمن ولد غلام رحمت کو 15 لاکھ روپے کے عوض میاں بیوی کو قتل کرنے پر راضی کیا۔

وسیم ریاض خان نے بتایا کہ ملزم عطاء الرحمن نے منصوبے کے مطابق گرم چشمہ آکر مقتول کے ہمسائے میں رہ کر ان سے  دوستانہ تعلقات استوار کرلیے۔ وقوعہ کے روز مقتول میاں اور اسکی حاملہ بیوی چترال شہر میڈیکل چیک اَپ کے بعد واپس جانے لگے تو راستے میں دونوں کو گولی مار کر فرار ہوگیا۔

ڈی پی او نے چترال پولیس کے افسران ڈی ایس پی ظفر احمد اور انسپیکٹر سجاد حسین سمیت ان کی ٹیم کی کارکردگی کی تعریف کرتے ہوئے کہا کہ انہوں نے ایک ہفتے کے ریکارڈ مدت میں نہ صرف ملزمان کو سامان اور رقم سمیت گرفتار کرلیا بلکہ ملزمان خورشید علی، حمزہ اور محمد حجاج نے اقرار جرم کرتے ہوئے واقعے کی تمام کڑیوں سے پردہ بھی اٹھایا۔

انہوں نے کہا کہ مقتول کے سسرال والوں نے میاں بیوی کی قتل کےلیے 15 لاکھ روپے میں سے 3 لاکھ روپے کی پیشگی ادائیگی کر دی تھی جس میں سے تقریباً 2 لاکھ روپے ملزمان سے برآمد ہوگئے ہیں۔

اس موقع پر مرکزی ملزم سمیت چاروں ملزمان، واردات میں استعمال ہونے والی گاڑی اور دیگر سامان  میڈیا کے سامنے پیش کیا گیا۔

 

آپ کے تبصرے

Your email address will not be published.

 
متعلقہ خبریں
 
 
 
 
 
 
 
Triple murder, Chitral, police, love marriage, crime, suspects arrest