Sunday, July 5, 2020  | 13 ZUL-QAADAH, 1441
ہوم   > پاکستان

عدالتی حکم کے باوجود مفتی کفایت اللہ رہا نہ ہوسکے

SAMAA | - Posted: Oct 31, 2019 | Last Updated: 8 months ago
SAMAA |
Posted: Oct 31, 2019 | Last Updated: 8 months ago

پشاور ہائیکورٹ سے ضمانت منظور ہونے کے باجود جمعیت علمائے اسلام کے مرکزی رہنما مفتی کفایت اللہ کی رہائی ممکن نہ ہوسکی۔

مفتی کفایت اللہ کو 30 اکتوبر کو مانسہرہ کے ڈپٹی کمشنر کے حکم پر تھری ایم پی او کے تحت اسلام آباد سے گرفتار کیا گیا تھا۔

جمعرات کو پشاور ہائیکورٹ میں مفتی کفایت اللہ کی درخواست ضمانت پر سماعت ہوئی۔ درخواست کی سماعت جسٹس اعجاز انور اور جسٹس شکیل پر مشتمل 2 رکنی بینچ نے کی۔

عدالت نے وکلاء کے دلائل سننے کے بعد ڈپٹی کمشنر کا حکم منسوخ کردیا اور مختصر فیصلہ سناتے ہوئے مفتی کفایت اللہ کی ضمانت منظور کرلی اور ان کی رہائی کا حکم جاری کیا۔

دوسری جانب ہری پور جیل کے حکام کا کہنا ہے کہ مفتی کفایت اللہ کی رہائی کا حکم انہیں بروقت نہیں ملا جس کے باعث جمعرات کو ان کی رہائی ممکن نہ ہوسکی۔

مفتی کفایت اللہ کو ڈپٹی کمشنر مانسہرہ کے حکم پر مبینہ طور پر اشتعال انگیز تقریر کرنے اور آزادی مارچ کے لیے چندہ جمع کرنے پر 3 ایم پی او کے تحت گرفتار کرکے سینٹرل جیل ہری پورمنتقل کیا گیا تھا۔

WhatsApp FaceBook

آپ کے تبصرے

Your email address will not be published.

متعلقہ خبریں
WhatsApp FaceBook
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube