Thursday, August 13, 2020  | 22 Zilhaj, 1441
ہوم   > پاکستان

سنیئر صحافیوں کی پیمرا کو ’شٹ اپ‘ کال

SAMAA | - Posted: Oct 28, 2019 | Last Updated: 10 months ago
SAMAA |
Posted: Oct 28, 2019 | Last Updated: 10 months ago

سنیئر صحافی حامد میر و دیگر نے پیمرا کے نوٹس کا تفصیلی جواب دیتے ہوئے کہا ہے کہ ٹاک شوز میں ماہرین اور مہمانوں کا فیصلہ کرنا پیمرا کا اختیار نہیں ہے۔ اس قسم کی پابندیوں کے پیچھے تحریک انصاف کی حکومت ہے۔

گزشتہ روز پیمرا نے تمام ٹی وی چینلز کو نوٹس جاری کرتے ہوئے کہا تھا کہ کوئی بھی اینکر دوسرے ٹاک شو میں بطور ’ماہر‘ شریک ہوکر اپنی رائے کا اظہار نہیں کرسکتا۔ اینکر کا کام ’ماڈریٹ‘ کرنا ہوتا ہے۔ ان کو ماڈریٹر کے طور پر ہی کام کرنا چاہیے۔

 

پیمرا کے نوٹس پر صحافیوں سمیت سیاستدانوں نے بھی تنقید کی۔

پیر کو سنیئر صحافی حامد میر، عاصمہ شیرازی، محمد مالک، کاشف عباسی، مہر عباسی، اویس توحید، ارشد شریف، عامر متین، رؤف کلاسرا، مظہر عباس اور شاہزیب خانزادہ نے ایک مشترکہ بیان جاری کرتے ہوئے کہا ہے کہ پیمرا کی جانب سے اینکرز اور صحافیوں پر ایک دوسرے کے ٹاک شوز میں جانے پر پابندی من مانی، آمرانہ اور آئین میں شامل آزادی اظہار رائے کی صریحاً خلاف ورزی ہے۔ ٹی وی شوز میں مہمان ماہرین اور تجزیہ کار کون ہونا چاہئے یہ فیصلہ کرنا پیمرا کے دائرہ کار میں نہیں ہے۔

 

مشترکہ بیان میں صحافیوں نے کہا ہے کہ ہم ان پابندیوں کا ذمہ دار وزیراعظم عمران خان کی سربراہی میں قائم تحریک انصاف کی حکومت کو قرار دیتے ہیں کیوں کہ آئینی طور پر تمام ریاستی اکائیوں کے بارے میں حکومت جوابدہ ہے۔

WhatsApp FaceBook

آپ کے تبصرے

Your email address will not be published.

متعلقہ خبریں
WhatsApp FaceBook
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube