ہوم   >  پاکستان

پختونخوا حکومت نے مارچ روکنے کی تیاری کرلی

1 month ago

کمیٹی بھی تشکیل

خیبر پختونخوا حکومت نے ایک طرف آزادی مارچ میں عوام کو شرکت سے روکنے کیلئے شاہراہوں پر کنٹینر رکھنا شروع کردیا اور دوسری طرف جمعیت علمائے اسلام سے صوبائی سطح پر مذاکرات کیلئے کمیٹی بھی تشکیل دے دی ہے۔

صوبے کے وزیر اطلاعات شوکت یوسفزئی نے کہا ہے کہ مولانا فضل الرحمان سے بہتر کی توقع ہے۔ اس لیے وزیراعلیٰ محمود خان نے جے یو آئی سے رابطے کے لیے صوبائی کمیٹی تشکیل دیدی ہے۔

اسی پریس کانفرنس میں آگے چل کر شوکت یوسفزئی نے الزام عائد کیا کہ مولانا فضل الرحمان کے احتجاج سے کشمیر کاز کو نقصان پہنچ رہا ہے۔ مولانا ملک کو بڑے حادثے سے دوچار کرنا چاہتے ہیں۔

دوسری جانب خیبر پختونخوا حکومت نے فضل الرحمان کے آزادی مارچ کو روکنے کیلئے اقدامات شروع کردیے ہیں اور اس سلسلے میں اٹک اور پشاورموٹروے انٹر چینج پر کنٹینرز پہنچا دیے گئے تاکہ مارچ کے شرکاء کو آگے بڑھنے سے روکا جاسکے۔

اس سے قبل خیبر پختونخوا کے وزیراعلیٰ محمود خان، وزیر دفاع پرویز خٹک اور دیگر حکومتی عہدیداران نے مولانا فضل الرحمان کو چیلنچ کرتے ہوئے کہا تھا کہ ان کو خیبر پختونخوا سے گزرنے نہیں دیں گے۔

 
TOPICS:

آپ کے تبصرے

Your email address will not be published.

 
متعلقہ خبریں