ہوم   >  پاکستان

وفاقی وزراء لفٹ نہیں کراتے،پی ٹی آئی اراکینِ سندھ اسمبلی

4 weeks ago

وزیراعظم عمران خان کے ساتھ ملاقات میں پی ٹی آئی سندھ کے اراکین نے شکایات کے انبار لگا دیئے۔ اراکین نے شکوہ کرتے ہوئے کہا کہ سندھ حکومت ہماری نہیں سنتی ہے، جب کہ وفاقی وزراء بھی لفٹ نہیں کراتے۔ عمران خان نے اراکین کو کراچی کی ترقیاتی اسکیمز پر عملدرآمد کی یقین دہانی کراتے ہوئے کہا کہ وفاق وزراء کراچی کے نمائندوں سے رابطے بڑھائیں۔

پیر کے روز وزیراعظم عمران خان ایک روزہ دورے پر کراچی پہنچے، جہاں گورنر ہاؤس میں پی ٹی آئی اراکین سندھ اسمبلی نے ان سے ملاقات کی۔ اراکین نے وزیراعظم سے سندھ حکومت کی شکایت کی کہ شکوہ کرتے ہوئے کہا کہ وہ ان کی نہیں سنتی اور وفاقی وزراء بھی نظر انداز کرتے ہیں۔

اراکین کا کہنا تھا کہ کراچی نے ہمیں بھاری مينڈيٹ ديا، تاہم ڈيليور نہيں کر پا رہے، ووٹرز ہم سے سوال کرتے ہیں کہ مسائل حل ہونے چاہیے۔ اراکین نے مطالبہ کرتے ہوئے کہا کہ کراچی کيلئے اعلان کردہ 162 ارب جاری کیے جائیں۔ کےالیکٹرک کی غفلت سے جاں بحق افراد کے لواحقين کو بھی معاوضہ دلوائیں۔

مزید جانیے : وزیراعظم نے حب میں 1320میگاواٹ کے بجلی منصوبے کاافتتاح کردیا

اس موقع پر وزیراعظم عمران خان نے اراکین کو حوصلہ دیتے ہوئے کہا کہ پی ٹی آئی ارکان سندھ اسمبلی کو گھبرانے کی ضرورت نہیں، حکومت کہیں نہیں جا رہی،  ترقیاتی اسکیمز پر عمل  جلد شروع ہوگا۔

گورنر سندھ عمران اسماعیل نے وزیراعظم کو آگاہ کرتے ہوئے بتایا کہ حلیم عادل اور فردوس شمیم میں اختلافات ختم کروا دیئے ہیں۔

وزيراعظم کا کراچی ميں پی ٹی آئی اراکين اسمبلی سے ملاقات میں کہنا تھا کہ شہر قائد کے مسائل حل کرنا صوبائی حکومت کا کام ہے، سندھ کے معاشی حالات کرپشن کی وجہ سے ابتر ہوئے۔

انہوں نے کہا کہ عوامی فلاح کيلئے وفاق مسائل حل کرنے ميں حصہ ڈال رہا ہے، بلدياتی نظام کراچی کے مسائل کا حل نکالنے ميں معاون ہوگا، بدقسمتی سے ماضی ميں کراچی کے مسائل کو نظر انداز کيا گيا۔

عمران خان کا کہنا تھا کہ حکومت کو تاريخ کا سب سے بڑا معاشی خسارہ ورثے ميں ملا، کراچی ميں پانی، ٹرانسپورٹ اور ويسٹ مینجمنٹ کے مسائل ہيں۔

وزیراعظم نے وفاقی وزراء کو کراچی کے ارکان سے رابطے مزيد بڑھانے کی ہدایت کرتے ہوئے یہ بھی یقین دہانی کرائی کہ کے فور منصوبہ ہر صورت مکمل کيا جائے گا۔

یہ بھی پڑھیں : متحدہ وفدکی وزیراعظم سے ملاقات، لاپتہ کارکنوں کی بازیابی کامطالبہ 

گورنر سندھ عمران اسماعیل نے وزیراعظم عمران خان سے ملاقات کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ وفاق اور صووبے کے درمیان مسائل اسد عمر حل کرائیں گے، وزیراعظم نے ترقیاتی کام تیز کرنے کی ہدایت کی ہے، کرچی میں سگنل فری کوریڈور کیلئے فنڈز مختص کئے گئے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ کراچی کا ديرينہ مسئلہ پانی ہے، کراچی گلوبل سٹی کا 34 ارب کا پيکیج ايکنک نے منظور کرليا، 12 سال کی غفلت کی وجہ سے شہر قائد اس حال کو پہنچا، وفاق کراچی کی ترقی کيلئے مکمل تعاون جاری رکھے گا۔

 

آپ کے تبصرے

Your email address will not be published.

 
متعلقہ خبریں
 
 
 
 
 
 
 
KARACHI, IMAN KHAN, PTI, PROBLEMS,