Friday, August 14, 2020  | 23 Zilhaj, 1441
ہوم   > پاکستان

خاتون پر تیزاب پھینکنے والے مجرم کی سزا برقرار

SAMAA | - Posted: Oct 17, 2019 | Last Updated: 10 months ago
Posted: Oct 17, 2019 | Last Updated: 10 months ago

سپريم کورٹ نے خاتون پر تیزاب پھینکنے والے مجرم کی بریت کی درخواست خارج کر دی۔

خاتون پر تیزاب پھینکنے کے مجرم علی اعوان کی بریت کی درخواست پر سماعت کے دوران جسٹس منظور ملک نے ريمارکس ديے کیوں نہ مجرم کی سزا بڑھا دیں کيونکہ عورت پر تیزاب پھینکنے کا جرم انتہائی اذیت ناک ہے۔

جسٹس منظور نے ریمارکس دیے کہ خاتون کا چہرہ ضائع ہو جائے تو پھر اس کی باقی زندگی کیا ہے۔ وہ خاتون ہی نہيں رہتی۔ عورت پر تیزاب پھینکنے سے بہتر گولی مار دی جائے۔

عدالت نے تيزاب گرد مجرم کی بریت کی درخواست خارج کرتے ہوئے 10 سال سزا کا فیصلہ برقرار رکھا۔

علی اعوان نے 2010 میں اسلام آباد میں شکیلہ نامی خاتون کے چہرے پر گھر میں داخل ہو کر تیزاب پھینک دیا تھا۔ مجرم کو ٹرائل کورٹ نے 10 سال کی سزا سنائی تھی۔

WhatsApp FaceBook

آپ کے تبصرے

Your email address will not be published.

متعلقہ خبریں
WhatsApp FaceBook
Supreme Court, Acid case, women, violence
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube