ہوم   >  پاکستان

کراچی: میڈیکل طالبہ مصباح کا مبینہ قاتل گرفتار

1 week ago

ملزم کا تعلق افغان ڈکیت گروہ سے ہے

 




کراچی میں ڈکیتی مزاحمت پر طالبہ مصباح کو قتل کرنیوالا مبینہ ملزم محمد نبی گرفتار کرلیا گیا ہے۔ایس ایس پی ایسٹ نے کہا ہے کہ رات گئے گھومنے والے افغان شہریوں کو دیکھیں تو پولیس کو اطلاع دیں کیوں کہ یہ ریکی میں ملوث ہوتے ہیں۔


بدھ کو ايس ايس پی ايسٹ اظفر مہيسر نے پریس کانفرنس کرتے ہوئے بتایا کہ ہمدرد یونی ورسٹی کے طالبہ کو اسٹریٹ کرائم کی واردات کے دوران قتل کرنے والا مبینہ ملزم پکڑا گيا۔


ايس ايس پی ایسٹ نے دعویٰ کیا کہ ملزم سے مصباح کا چھینا ہوا موبائل فون بھی برآمد کرلیا گیا ہے۔ انھوں نے مزید بتایا کہ مصباح کے قتل کا ملزم افغان باشندہ ہے اور گلشن اقبال ميں افغان ڈکيت گينگ سرگرم ہے، افغان گروہ وارداتیں کرنے کے بعد سہراب گوٹھ فرار ہوجاتا ہے، مصباح قتل کيس کا ايک ملزم اب بھی فرار ہے۔ واضح رہے کہ 3اکتوبر کو کراچی کے علاقے گلشن اقبال میں موچی موڑ کے نزدیک یونی ورسٹی جانے والی لڑکی مصباح کو ڈکیتی مزاحمت پر قتل کیا گیا تھا۔



ہائی پروفائل کیسز پرکام کرنیوالے پولیس انسپکٹر پرفائرنگ


ايس ايس پی ایسٹ نے مزید بتایا کہ خداداد کالونی میں فائرنگ کيس ميں ملزم کے خلاف شواہد ہيں، ہائی پروفائل کيس پرکام کرنے کی وجہ سے ٹارگٹ کيا گيا۔


 واضح رہے کہ کراچی کےعلاقے خدا داد کالونی میں نامعلوم ملزمان نے پولیس انسپکٹر غوث عالم کو فائرنگ کرکے زخمی کردیا۔


پولیس کے مطابق انسپکٹر غوث عالم پر اللہ والی چورنگی کے قریب گھات لگائے ملزمان نے فائرنگ کی۔ غوث عالم اپنی گاڑی میں دفتر کی جانب جا رہے تھے جب ان پر حملہ کیا گیا۔


پولیس کا کہنا ہے کہ غوث عالم ہائی پروفائل کیسز پر کام کر رہے تھے، سب انسپکٹر غوث عالم ساؤتھ انویسٹی گیشن بریگیڈ تھانے میں تعینات ہیں، فائرنگ سے زخمی سب انسپکٹر غوث عالم کو طبی امداد کیلئے پہلے جناح اسپتال اور بعد ازاں آغا خان اسپتال منتقل کیا گیا۔


 
TOPICS:

آپ کے تبصرے

Your email address will not be published.

 
متعلقہ خبریں
 
 
 
 
 
 
 
Karachi,Crime,street crime,target killing