ہوم   >  پاکستان

مریم نواز، یوسف عباس کے جوڈیشل ریمانڈ میں توسیع

1 month ago

احتساب عدالت نے چوہدری شوگر ملز کيس ميں مريم نواز اور ان کے کزن يوسف عباس کے جوڈيشل ريمانڈ ميں 23 اکتوبر تک توسيع کردی۔

مريم نواز اور يوسف عباس کے خلاف کیس کی سماعت احتساب عدالت کےجج جواد الحسن نے کی۔

کمرہ عدالت ميں بدنظمی پر فاضل جج نے برہمی کا اظہار کرتے ہوئے پوليس کو بلا کر سب کو کمرے سے نکالنے کا حکم دے ديا ۔

عدالت نے تفتشي افسر کے بروقت نہ پہنچے پر غير حاضرِی لگوادی۔

احتساب عدالت کے باہرميڈيا سے گفتگو کرتے ہوئے مريم نواز نے حکومت کو شديد تنقيد کا نشانہ بنايا۔

عدالت نے مریم نواز اور یوسف عباس کے جوڈیشل ریمانڈ میں 14روزکی توسیع کرتے ہوئے23 اکتوبر کو دوبارہ پیش کرنے کا حکم دے ديا ۔

اس سے قبل 25 ستمبر کو جسمانی ريمانڈ ختم ہونے پر مريم نواز کو 9 اکتوبر تک جوڈيشل ريمانڈ پر جيل بھجوايا گيا تھا۔

مریم نواز کی درخواست ضمانت پر نیب کو نوٹس جاری

یاد رہے کہ مریم نواز کی جانب سے منی لانڈرنگ کیس میں ضمانت پر رہائی کیلئے لاہور ہائیکورٹ ميں درخواست دائرکی گئی ہے جس پر ہائیکورٹ نے 14 اکتوبر کو نیب سے جواب طلب کررکھا ہے۔

مریم نوازنے عدالت سے ضمانت پر رہائی کی درخواست پرحتمی فیصلہ آنے تک عبوری ضمانت پر رہا کرنے کی استدعا کرتے ہوئے موقف اختیار کیا ہے کہ تمام جائیدادیں اور اثاثے ڈکلیئر کر رکھے ہيں ۔ چوہدری شوگر ملز کيس ميں منی لانڈرنگ کا الزام لگا کر سياسی انتقام کا نشانہ بنايا جارہا ہے۔

پس منظر

چوہدری شوگرملز کیس میں نيب کا الزام ہے کہ مريم نواز نے 1998 ميں ٹی ٹی کے ذريعے16 کروڑ روپے صدیقہ سعید نامی خاتون سے وصول کیے تھے اور یہ رقم چودھری شوگر ملز کو منتقل کر دی گئی

 
TOPICS:

آپ کے تبصرے

Your email address will not be published.

 
متعلقہ خبریں