ہوم   >  پاکستان

کراچی، نوجوان کو تشدد کا نشانہ بنانے پر 3افراد زیرِحراست

2 months ago

ایم این اے شاہ زین بگٹی کے گارڈز نے تشدد کیا

کراچی کے علاقے ڈیفنس میں پارکنگ کے معاملے پر 19 سالہ نوجوان کو تشدد کا نشانہ بنانے پر تین افراد کو حراست میں لے لیا گیا ہے۔

اتوار 6 اکتوبر کی رات صبا کمرشل ڈيفنس ميں نجم نامی نوجوان کی والدہ بیٹے پر تشدد کی شکایت لے کر پولیس کے پاس پہنچی اور الزام لگایا کہ ایم این اے شاہ زین بگٹی کے گارڈز نے تشدد کیا ہے۔

نوجوان کا کہنا ہے کہ 10 سے 15 لوگوں نے گاڑی پارک کرنے کے تنازع پر مجھے تشدد کا نشانہ بنايا جب کہ ہوائی فائرنگ بھی کی گئی۔

میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے نجم کی والدہ کا کہنا تھا کہ جائے وقوعہ پر جو کچھ ہوا اسے بہت سے لوگوں نے دیکھا لیکن خوف کی وجہ سے کوئی کچھ نہیں بولا۔

نوجوان کی والدہ کی شکایت پر مقدمہ درخشاں تھانے میں درج کر لیا گیا ہے۔

ایس پی کلفٹن سہائے عزیز کا يقين دہانی کراتے ہوئے کہنا تھا کہ پولیس معاملے کی تحقیقات کےلیے ہرممکن کوشش کرے گی۔ ایس پی کلفٹن کی ہدایت کے باوجود ابھی تک سی سی ٹی وی کيمروں سے مدد نہيں لی گئی۔

الزام لگنے پر شاہ زين بگٹی کے ترجمان نے 19 سالہ نوجوان کيخلاف قانونی کارروائی کا اعلان کرتے ہوئے کہا کہ پہلے نجم نے بدمعاشی کی۔

طالبعلم کی میڈیکل رپوٹ تھانے میں جمع کرادی گئی ہے جبکہ زيرحراست تين افراد سے تفتيش جاری ہے۔

 

آپ کے تبصرے

Your email address will not be published.

 
متعلقہ خبریں
 
 
 
 
 
 
 
Karachi, boy torture, Shahzain Bugti, Defence, parking issue, police