ہوم   >  پاکستان

ورلڈ ریبیز ڈے: پاکستان کو سالانہ 10لاکھ ویکسین درکار

2 months ago

ملک میں ریبیز سے ہر سال5 ہزار جانوںکا نقصان

کتے کے کاٹنے سے لگنے والی بیماری ریبیز انسانی زندگی کیلئے بڑا خطرہ ہوتی ہے۔پاکسان میں ویکسین نہ ملنے سےتقریباً 5 ہزار  ہر سال موت کے منہ میں چلے جاتے ہیں۔اس سےآگاہی کیلئے پاکستان سمیت دنیا بھر میں آج ریبیز ڈے منایا جا رہا ہے۔

عالمی ادارہ صحت کے تعاون سے دنیا بھر میں آج ریبیز ڈے منایا جارہا ہے۔ ریبیز کے باعث ہرسال پاکستان میں 5 ہزار زندگیاں ختم ہوجاتی ہیں۔

معاون خصوصی برائے صحت ڈاکٹر ظفر مرزا نے بتایا ہے کہ پاکستان میں ریبیز کی ویکسین کی قلت ہے،مقامی طور پر یہ ویکسین اتنی بڑی تعداد میں تیار نہیں ہورہی جتنی اس کی ضرورت ہے۔ ریبیز کے علاج کے علاوہ اس پر قابو پانے کے لیے بھی اقدامات کرنا ہونگے۔

پاکستان کو سالانہ 10 لاکھ اینٹی ریبیز ویکسین کی ضرورت ہوتی ہے جس کا صرف 7 فیصد ملکی سطح پر تیار کیا جاتا ہے۔ ایگزیکٹو ڈائریکٹر نیشنل ہیلتھ سروسز میجر جنرل عامر اکرام نے کہا ہے کہ جو کام بہت پہلے ہونا چاہیے تھا اس پر ہم اب توجہ دے رہے ہیں۔

 

آپ کے تبصرے

Your email address will not be published.

 
متعلقہ خبریں