ہوم   >  پاکستان

طالبہ ہلاکت کیس: زیرحراست نوجوان سے نمرتا کا کارڈ برآمد

4 weeks ago

لاڑکانہ میں بی ڈی ایس کی طالبہ نمرتا کی ہلاکت پر حراست میں لئے گئے کلاس فیلو مہران ابڑو سے نمرتا کا اے ٹی ایم کارڈ برآمد ہوا۔ تفتیشی حکام کے مطابق نمرتا مہران سے شادی کی خواہشمند تھی۔

میڈیکل کالج لاڑکانہ کے ہاسٹل تھری کے کمرے سے تین روز قبل طالبہ نمرتا کماری کی لاش ملی تھی، وہ بی ڈی ایس فائنل ایئر کی طالبہ اور امتحانات کی تیاری کیلئے ہاسٹل میں مقیم تھی۔

طالبہ کی پراسرار ہلاکت کی تحقیقات کے دوران پیشرفت ہوئی ہے، پولیس نے نمرتا کے دو کلاس فیلوز کو حراست میں لے لیا، جن میں سے ایک مہران ابڑو کے پاس سے متوفی طالبہ کا اے ٹی ایم کارڈ بھی برآمد ہوا ہے، دونوں نوجوانوں سے پوچھ گچھ جاری ہے۔

پولیس کے مطابق نمرتا اور مہران ابڑو قریبی دوست تھے اور طالبہ مہران سے شادی کی خواہشمند تھی۔

مزید جانیے : ہاسٹل کے کمرے سے طالبہ کی لاش برآمد

ایس ایس پی لاڑکانہ کے مطابق نمرتا کے موبائل نمبر کی سی ڈی آر کے مطابق اس کا آخری رابطہ ان دونوں لڑکوں سے ہوا تھا، جس پر دونوں کو حراست میں لیا گیا، لڑکوں نے اپنے موبائل سے میسجز ڈلیٹ کردیئے، جس کے بعد فون فارنزک کیلئے ایف آئی اے بھجوا دیئے گئے۔

پولیس افسر کا کہنا ہے کہ معاملہ بلیک میلنگ کا تھا یہ کچھ اور یہ بتانا قبل از وقت ہے، مزید تفتیش کے بعد حقائق عوام کے سامنے لائیں گے۔

میڈیکل کالج لاڑکانہ کے طالبعلموں کو حراست میں لینے پر دیگر طلبہ نے احتجاج کرتے ہوئے مطالبہ کیا ہے کہ پولیس جلد حقائق سامنے لائے۔

نمرتا کی پراسرار موت کے بعد طلبہ کی جانب سے تیسرے روز بھی کلاسز کا بائیکاٹ کیا گیا، پولیس نے نمرتا کی 4 سہیلیوں سمیت یونیورسٹی انتظامیہ کے بیانات بھی قلمبند کئے۔

 
TOPICS:

آپ کے تبصرے

Your email address will not be published.

 
متعلقہ خبریں