ہوم   >  پاکستان

ڈاکٹرعشرت العباد کا ایم کیوایم پاکستان میں شمولیت کا امکان

4 weeks ago

ایم کیو ایم کے سابق رہنماء اور طویل ترین عرصے تک گورنر سندھ رہنے والے ڈاکٹر عشرت العباد خان سیاست میں واپسی کیلئے تیار ہیں، انہیں کراچی آنے پر ایم کیو ایم پاکستان میں بڑا عہدہ دیئے جانے کا امکان ہے۔

ایم کیو ایم پاکستان کے باوثوق ذرائع کے مطابق ڈاکٹر عشرت العباد خان کراچی واپس آکر ایم کیو ایم پاکستان میں شامل ہوں گے۔ سابق گورنر سندھ  ایک زمانے میں بانی متحدہ الطاف حسین کی آنکھ کا تارہ سمجھے جاتے تھے۔

سماء ڈیجیٹل سے گفتگو کرتے ہوئے ذرائع نے بتایا کہ ایم کیو ایم پاکستان نے سابق گورنر کیلئے اپنے دروازے کھلے رکھے، مستقبل قریب میں انہیں پارٹی میں اہم عہدہ بھی دیا جائے گا۔

ڈاکٹر عشرت العباد کی واپسی سے متعلق خبریں منظر عام پر آنا پہلی بار نہیں، 2018ء کے عام انتخابات سے قبل بھی ایسی افواہیں سرگرم تھیں کہ وہ اپنی پارٹی کا اعلان کریں گے۔

میئر کراچی وسیم اختر اور عشرت العباد خان کے درمیان دبئی میں ہونیوالی ملاقات کی ایک تصویر منظر عام پر آنے کے بعد ایک بار پھر یہ اطلاعات سامنے آرہی ہیں۔

میئر کراچی وسیم اختر ایم کیو ایم پاکستان کے سینئر رہنماء اور ڈپٹی کنوینر بھی ہیں، انہوں نے پارٹی رہنماؤں کی اجازت سے سابق گورنر سے ملاقات کی۔

یہ بھی اطلاعات ہیں کہ ملاقات میں کراچی کے مسائل پر تفصیلی بات چیت ہوئی، عباد نے زور دیا کہ میئر کراچی مسائل کے حل کیلئے وفاقی اور صوبائی حکومتوں سے رابطوں اور ہم آہنگی میں اضافہ کریں، یہ خبریں شہر قائد کے بنیادی ڈھانچے کی بدحالی کے باعث خبروں میں آرہی ہیں۔

عشرت العباد خان نے کراچی کے مسائل کے حل کیلئے میئر کراچی کو اپنے تعاون کی مکمل یقین دہانی کراتے ہوئے کہا کہ ناصر حسین شاہ سے بھی رابطہ کرکے ساتھ بیٹھنے اور کام کرنے کیلئے بات کروں گا، جس سے کے ایم سی اور صوبائی حکومت کے درمیان ہم آہنگی میں بہتری آئے گی۔

ذرائع کے مطابق سابق گورنر اور میئر کراچی کے درمیان ایم کیو ایم پاکستان کی کراچی اور شہری سندھ میں سیاسی صورتحال پر بھی تبادلہ خیال ہوا، ساتھ ہی متحدہ قومی موومنٹ پاکستان کی مستقبل کی قیادت سے متعلق بھی بات چیت کی گئی۔ یہ ایک واضح نشانی ہے کہ ایم کیو ایم پاکستان کی سیاست تبدیل ہونے جارہی ہے۔

مفاہمت

ڈاکٹر عشرت العباد خان ایسے خاص لوگوں میں شامل ہیں جو اقتدار میں ہر ایک سے خوشگوار تعلقات رکھنے کی اپنی خصوصیت کے باعث مشہور ہیں، وہ 2002ء سے 2016ء تک انتہائی طویل ترین مدت کیلئے گورنر سندھ کے طور پر وفاق (یا اسلام آباد) کے نمائندہ رہے۔

ان کی بہت سی صلاحیتوں میں سے ایک ثالثی بھی ہے، ایم کیو ایم اور پی پی پی ایک دوسرے کا گلا کاٹنے کیلئے تیار بیٹھی تھیں تو انہوں نے بار بار فضاء سازگار بنانے میں اپنا کردار ادا کیا۔

وہ یقینی طور پر ایسی شخصیت ہیں جو سابق ایم کیو ایم رہنماؤں کو منا کر پارٹی میں واپس لاسکتے ہیں، مثال کے طور پر وہ اپنی میٹھی میٹھی باتوں سے پاک سرزمین پارٹی کے رضا ہارون، ڈاکٹر صغیر احمد، وسیم آفتاب اور انیس احمد ایڈووکیٹ کی ناراضی ختم کرکے انہیں دوبارہ ایم کیو ایم میں شمولیت پر آمادہ کرسکتے ہیں۔

ایسی ہی ایک رہنماء ڈاکٹر فاروق ستار بھی ہیں جنہوں نے عامر خان کے ساتھ سنجیدہ نوعیت کے اختلافات کے بعد پارٹی چھوڑ کر الگ ہوگئے تھے۔

سابق سرپرست سے ملاقات

میئر کراچی وسیم اختر نے سابق آمر جنرل (ر) پرویز مشرف سے بھی دبئی میں ملاقات کی، جو ایک وقت میں ایم کیو ایم (جب وہ لوکل حکومت چلارہی تھی) کے بڑے حمایتی تھے۔

رپورٹ کے مطابق سابق صدر کا کہنا تھا کہ کراچی کے مسائل کے حل کیلئے مقامی حکومت کو آئین کے آرٹیکل 140 اے کے تحت مکمل اختیارات دینا ضروری ہے۔ (واحد مسئلہ یہ ہے کہ مذکورہ آرٹیکل میں مقامی حکومت کی شکل سے متعلق فیصلے کا اختیار صوبائی حکومت کو دیا گیا ہے)۔

میئر کراچی دبئی کے 2 روزہ دورے کے بعد آج (جمعرات کو) شام واپس کراچی پہنچ رہے ہیں۔

ترجمہ : فرحان عادل

 

آپ کے تبصرے

Your email address will not be published.

 
متعلقہ خبریں