ہوم   >  پاکستان

کتے کے کاٹنےکی ویکسین نہ ملنے پر بچہ جاں بحق

4 weeks ago

فوٹو: اے ایف پی

لاڑکانہ ميں کتے کے کاٹنے کی ويکسين نہ ملنے پر 10 سالہ بچہ ماں کی گود ميں ہی دم توڑ گیا۔

بچے کے والد کے مطابق عید سے دو روز پہلے بیٹے میر حسن کو کتے نے کاٹا جس کے بعد بچے کو ویکسین کیلئے مختلف جگہ لیکر گئے لیکن ویکسین نہ ملنے پر علاقے کے کچھ ڈاکٹروں سےعلاج کرایا۔ گزشتہ شب طبيعت بگڑ گئی اور کھانا پینا بند ہوگیا۔

اے آر وی سينٹر انچارج ڈاکٹر نورالدين کہتے ہيں کہ حکومت کی جانب سے کئی ماہ سے ويکسين فراہم نہيں کی جا رہی جس کی وجہ سے کمی تھی لیکن بچے کو بروقت یہاں نہ لانے کے باعث ريبيز مثبت ہوگيا۔

کمشنر لاڑکانہ سلیم کھوڑو نے ویکسین کی کمی کے الزام کو مسترد کرتے ہوئے کہا کہ بچے کی موت والدین کی غفلت سے ہوئی۔ ویکسین کی کمی ضرور ہے لیکن ایسا نہیں کہ مریض آجائے تو فراہم نہ کی جائے۔

کمشنر کے مطابق بچے کوعیدالاضحیٰ سے 2 روز قبل کتے نے کاٹا تھا۔ والدین ڈاکٹر کے پاس لے جانے کے بجائے دیسی علاج کرواتے رہے اور 40 دن گزرنے کے بعد جب مرض بگڑا تو والدین کو پتا چلا۔

سلیم کھوڑو کا کہنا تھا کہ والدین بچے کو شکارپور لے گئے جہاں ڈاکٹرز نے جواب دے دیا۔ مرض آخری اسٹیج پر تھا اور بچنا ناممکن تھا۔ یہ تاثر غلط ہے کہ ویکسین موجود نہیں تھی کیونکہ ویکسین کی کمی ہے لیکن موجود ضرور ہوتی ہے۔

وزير اطلاعات سندھ سعید غنی کہتے ہيں کہ بچے کی موت پر کمشنر لاڑکانہ کی ابتدائی رپورٹ مل گئی ہے جس کے مطابق والدين نے لاپرواہی برتی۔

سعيد غنی کا کہنا تھا والدين نے بچے کو کراچی لے جانے کی ضد کی جس پر ڈاکٹرز نے مشورہ ديا کہ اس حالت ميں منتقل نہ کيا جائے۔ والدين کی ضد پر بچے کو روانہ کيا جا رہا تھا کہ انتقال ہوگيا۔

 
TOPICS:

آپ کے تبصرے

Your email address will not be published.

 
متعلقہ خبریں