ہوم   >  پاکستان

آزادی مارچ میں 15 لاکھ سے زیادہ لوگ شریک ہونگے

4 weeks ago

جمعیت علمائے اسلام ف کے سربراہ مولانا فضل الرحمان نے دعویٰ کیا ہے کہ آزادی مارچ میں 15 لاکھ سے زیادہ لوگ شریک ہوں گے۔

جے یو آئی ف کے ورکرز کنونشن سے خطاب کرتے ہوئے مولانا فضل الرحمان کا کہنا تھا کہ حکومت نے چین کو ناراض کردیاہے، بھارت، ایران اور افغانستان کے ساتھ حالت جنگ کی طرف جارہے ہیں، کشمیر کو فروخت کر دیا گیا ہے، مشترکہ اجلاس کی قراردامیں آرٹیکل 370 کےخاتمے کامطالبہ نہیں کیاگیا،مودی کے الیکشن منشور کے وقت ہماری سفارتکاری کہاں تھی؟،عمران خان نے کہا تھا مودی کامیاب ہوا تو مسئلہ کشمیر حل ہوجائے گا۔

مولانا فضل الرحمان کا کہنا تھا کہ ملک میں ایک سیاسی جنگ کی کشمکش ہے، جس میدان میں ہم اترے ہیں اس مقصد کے لیے شرط یہ ہے کہ دل سے خوف نکال دیں، دل میں خوف ہے تو تحریکیں نہیں چل سکتی ہیں، ہم نے ایک سال وقت دیا تاکہ ڈرنے والے لوگ پیچھے ہٹ جائیں، اب ہم نے ملکی سلامتی کی جنگ لڑنی ہے اور ملک کو آزادی دلانی ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ پہلی بات حکومت ناجائز ہے،دوسری بات نااہل بھی ہے، حکمران اسلامی دفعات کےخاتمے کے مغربی ایجنڈے کے ایجنٹ ہیں، روزگار ملنے کے بجائے 20 لاکھ نوجوان بیروزگار ہوگئےہیں۔

سربراہ جے یو آئی نے کہا کہ کوئی آگےہورہا ہے کوئی پیچھے لیکن ہرجماعت آزادی مارچ میں ساتھ ہوگی، پوری قوم کو مل کر ملک کو بچانا اور آزاد کرانا ہے، آزادی مارچ میں 15 لاکھ سے زیادہ لوگ شریک ہوں گے،پوری قوت سے میدان میں اتر کر ان قوتوں کو شکست دینی ہے۔

 

آپ کے تبصرے

Your email address will not be published.

 
متعلقہ خبریں