ہوم   >  پاکستان

ہاسٹل سے مردہ ملنے والی طالبہ کا پوسٹمارٹم مکمل

4 weeks ago

لاڑکانہ میں چانڈکا ميڈيکل کالج کے ہاسٹل سے ملنے والی طالبہ کی میت پوسٹ مارٹم کے بعد ورثا کے حوالے کردی گئی ۔

گزشتہ روز میڈیکل کالج لاڑکانہ کے ہاسٹل نمبر 3 کے کمرے سے طالبہ کی لاش برآمد ہوئی تھی۔

پچیس سالہ طالبہ ميڈيکل کالج ميں بی ڈی ایس فائنل ائرکی طالبہ اورہاسٹل میں ہی رہائش پزیر تھی جبکہ اس کی فیملی کراچی میں مقیم تھی۔

آر ايم او چانڈکا اسپتال کے مطابق طالبہ کے گلے پرنشانات ہيں تاہم موت کی حتمی وجہ کا تعین پوسٹ مارٹم رپورٹ آنے کے بعد ہی ہوسکے گا۔

طالبہ کے اہلخانہ نے خودکشی کا امکان مسترد کرديا ہے۔

بھائی کا کہنا ہے کہ میں خود بھی میڈیسن کا ڈاکٹرہوں، میری بہن کے گلے پرموجود نشانات خودکشی کے نہیں۔ یہ نشان دوپٹے کے بجائے کسی رسی يا تارکے ہیں جبکہ اس کے بازو پرکسی کے پکڑنے سے پیدا ہونے والے نشانات موجود ہیں۔

ہندو مذہب سے تعلق رکھنے والی طالبہ کی آخری رسومات آبائی شہر میرپور ماتھیلو میں ادا کی جائیں گی۔

میت آبائی شہر پہنچنے پر سوگ کا سماں نظرآیا۔ ہندو برادری کی جانب سے شہرکے کاروباری مراکز بند رکھے گئے ہیں۔

دوسری جانب ساتھی طالبہ کی افسوسناک موت پر ڈینٹل کالج کی فضا سوگوار ہے۔ طلبا نے کلاسز کا بائیکاٹ کر کے احتجاجی ریلی نکالی ۔

وائس چانسلر بینظیرشہید یونيورسٹی ڈاکٹر انیلا رحمان کے مطابق پوليس نے ہاسٹل کے کمرے سے طالبہ کا دوپٹہ موبائل فون اور ديگرشواہد اکھٹے کرليے ہيں جبکہ دیگر2 روم میٹس کے بیان بھی ریکارڈ کئے جائیں گے ۔

 

آپ کے تبصرے

Your email address will not be published.

 
متعلقہ خبریں