ہوم   >  پاکستان

غیرجمہوری قوتوں کا مقابلہ کرکے وفاق کو بچانا ہوگا، بلاول

1 month ago

پاکستان پیپلزپارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری کہتے ہیں کہ ہمیں وفاق کو بچانے کےلیے غیر جمہوری قوتوں کا مقابلہ کرنا پڑے گا۔

لاڑکانہ میں ورکرز کنونشن سے خطاب کے دوران چیئرمین پیپلزپارٹی نے کہا کہ حکومت نے کراچی کو ایک سال میں ایک روپیہ نہیں دیا اور اب کچرے کو بہانہ بنا کر شہر پر قبضہ چاہتی ہے۔

بلاول بھٹو نے کہا کہ صوبوں سے معاشی نا انصافی ہو رہی ہے۔ کٹھ پتلی سرکار آئینی اور معاشی حقوق پر ڈاکا ڈال رہی ہے لیکن یاد رکھیں سندھ کےعوام کٹھ پتلی وزیراعلیٰ کو برداشت نہیں کریں گے۔

چیئرمین پیپلزپارٹی نے کہا کہ کچھ لوگوں سے اٹھارویں ترمیم برداشت نہیں ہو رہی ہے اور پہلے بھی لوگوں سے 1973 کا آئین برداشت نہیں ہوتا تھا۔ انہوں نے کہا کہ پیپلز پارٹی نے بےنظیر انکم سپورٹ جیسے انقلابی اقدامات کیے اور صوبائی خود مختاری دی جبکہ آصف زرداری نے پاکستان کھپے کا نعرہ لگا کر ملک کو بچایا۔

بلاول بھٹو نے کہا کہ یہ سمجھتے ہیں قیادت کو جیل میں ڈال کر سندھ میں کٹھ پتلی حکومت لاسکتے ہیں لیکن آصف زرداری نے پہلے بھی جیل میں وقت گزارا اور اب بھی تیار ہیں۔ اس حکومت کے سامنے سر نہیں جھکائیں گے۔ یہ حکومت سمجھتی ہے جیل میں طبی سہولیات نہ دے کر ہمیں دبا لیں گے۔

چیئرمین پیپلزپارٹی نے کہا کہ ہم نے آمروں کا ظلم برداشت کیا ہے اور اب اس کٹھ پتلی حکومت کا ظلم برداشت کرنے کےلیے بھی تیار ہیں۔ جسے گرفتار کرنا ہے کر لو لیکن اپنے اصولی مؤقف پر سمجھوتہ نہیں کریں گے۔ اٹھارویں ترمیم، معاشی انصاف اور جمہوری اصولوں پر سمجھوتہ نہیں کریں گے۔

بلاول بھٹو نے کہا کہ حکومت نے ایک کروڑ نوکریوں کا وعدہ کرکے نوجوانوں کو بےروزگار کر دیا جبکہ 50 لاکھ گھروں کا وعدہ کرکے لوگوں کو بے گھر کیا۔ حکومت نے آئی ایم ایف کے سامنے سَر جھکا کر معاشی خود مختاری کا بھی سودا کیا۔

چیئرمین پیپلزپارٹی نے کہا کہ ہم نے ہمیشہ اسلام آباد میں دھرنے سے انکار کیا ہے لیکن اگر حکومت کے اتحادی اور سیلیکٹرز حکومت کو گھر نہیں بھیجیں گے تو ہم اسلام آباد آکر گھر بھیجیں گے۔ حکومت کو سال کے آخر تک کی ڈیڈ لائن دیتے ہیں۔

 

آپ کے تبصرے

Your email address will not be published.

 
متعلقہ خبریں