ہوم   >  پاکستان

حکومت سے کوئی ڈیل نہیں ہورہی،شاہد خاقان

1 week ago

ہمیں ڈیل کی کوئی ضرورت نہیں




سابق وزیراعظم شاہد خاقان عباسی نے کہا ہے کہ چیئرمین نیب کی تقرری پر وہ قوم سے معافی مانگتے ہیں، پیپلز پارٹی کی طرف سے نام آیا تھا،اتفاق رائے سے تقرری کا فیصلہ کیا۔ انھوں نے حکومت کے ساتھ ڈیل کی خبروں کی ایک بار پھر تردید کردی اور کہا کہ کوئی ڈیل نہیں ہورہی، نہ میں نے کوئی خط لکھا ہے، ہمیں ڈیل کی کوئی ضرورت نہیں۔


جمعرات کو ایل این جی کیس کی سماعت کے موقع پر احتساب عدالت میں سابق وزیراعظم شاہد خاقان عباسی نے کمرہ عدالت میں صحافیوں سے غیر رسمی گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ مجھ  پرالزام لگایا وزارت خارجہ کی گاڑی استعمال کرتا ہوں،جب میں وزیراعظم  تھا تو بتادیتے میں  آفس پہنچنے کیلئے تانگہ یا ٹیکسی کرلیتا۔


شاہد خاقان نے کہا کہ ایک سال سے نیب تفتیش کررہا ہے، 55 دن سے ریمانڈ چل رہا ہے، ابھی تک کیس سمجھ میں نہیں آیا۔ انھوں نے کہا کہ  نیب کا قیام ہی غلط ہے اور یہ ن لیگ کو توڑنے کیلئے بنایا گیا تھا۔


انھوں نے سوال اٹھایا کہ یہ کیسا ادارہ ہے کہ سابق وزیراعظم کو پہلے گرفتار کرتے ہیں اور پھر کیس بناتے ہیں، میں نے اگر کوئی کرپشن کی ہے تو بتائیں کیا کرپشن کی ہے؟۔


انھوں نے یہ بھی بتایا کہ تفتیشی افسر کا کہنا ہے کہ کابینہ کا فیصلہ غلط تھا، یہ فیصلہ ہونا چاہیئے کہ ملک کابینہ کو چلانا ہے یا نیب کو چلانا ہے۔

 

آپ کے تبصرے

Your email address will not be published.

 
متعلقہ خبریں