ہوم   >  پاکستان

وفاقی وزیر قانون کے بیان پر سندھ سے سخت ردعمل

2 weeks ago

وفاقی حکومت مسائل حل کرنے کی نيت ہی نہیں رکھتی




وفاقی حکومت کی جانب سے کراچی کی ابتر حالت پر سندھ میں آرٹیکل 149 کے نفاذ کا اشارہ سامنے آنے کے بعد صوبائی حکومت کی جانب سے سخت ردعمل سامنے آیا ہے۔


وزيرقانون فروغ نسيم کا کہنا تھا کہ کراچی کے حالات سدھارنے کیلئے سندھ میں آرٹيکل 149 کے نفاذ کا یہ درست وقت ہے۔ مسائل حل کرنے ہیں تو سخت اقدامات کرنے ہوں گے۔ یہ ذاتی رائے ہے اوراس حوالے سے کراچی کميٹی ميں تجويزرکھوں گا ۔



وفاقی وزیر قانون کا سندھ میں آرٹیکل 149 کے نفاذ کا اشارہ


وفاقی وزیر قانون کے بیان پررد عمل ظاہرکرتے ہوئے سندھ کے مشیرقانون مرتضیٰ وہاب نے کہا کہ وفاقی حکومت صوبائی حکومت کو ڈائريکشن ديتی ہے۔ فروغ نسيم نے واضح کرديا وفاق سے کوئی اميد نہ رکھی جائے۔


صوبائی مشيرنے الزام عائد کیا کہ وفاقی حکومت مسائل حل کرنے کی نيت ہی نہیں رکھتی، انہوں نے دعویٰ کيا کہ پی پی حکومت نے عوام کی سب سے زيادہ خدمت کی ہے۔


وزيراطلاعات سندھ سعيدغنی نے بھی سخت ردعمل دیتے ہوئے کہا کہ وفاقی حکومت صوبے کو ٹیک اوورنہیں کرسکتی ۔ محض کچرے کو بنیاد بنا کر آرٹیکل 149 نہیں لگایاجاسکتا۔


انہوں نے کہا کہ ’’آرٹيکل 149 لگانا ہے توپنجاب میں لگائیں ۔کميٹی کميٹی کا ڈرامہ ختم کيا جائے‘‘۔ انہوں نے مطالبہ کیا کہ کراچي کو 162 ارب روپے فراہم کيے جائيں۔


سعید غنی نے کہا کہ فروغ نسيم سمجھدارآدمی ہيں مگربدقسمتی سےسياستدان نہيں۔ ایم کیوایم پی ٹی آئی کے ہاتھوں استعمال ہورہی ہے۔


انہوں نے  وفاقی وزیر برائے بحری امور علی زیدی کو بھی تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا کہ علی زيدی نے پورے کراچی کوگندا کرديا۔ وزيراعظم کوکلين کراچی مہم کا پتہ چل جائےتوعلی زيدی کو برطرف کر کے پارٹی سے نکال دیں۔


دوسری جانب گرینڈ ڈیموکریٹک الائنس کے سربراہ سربراہ پير پگارا نے بھی آرٹیکل 149 کی تجویز پرحيرت کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ فروغ نسيم کو چاہيے وہ دارالحکومت کو کراچی واپس لانے کا مطالبہ کريں۔


ايک بيان ميں پیر پگارا نے کہا کہ کراچی کو الگ کرنے کی بات سمجھ سے باہر اور ناقابل قبول ہے۔ وزيرقانون کوسوچ سمجھ کر بات کرني چاہيے ۔ جب پاکستان وجود میں آیا کراچی دارالحکومت تھا جسےاچانک اسلام آباد منتقل کردیاگیا جس پراربوں روپے خرچ ہوئے ۔


انہوں نے کہا کہ اس وقت بھی سیکورٹی کےاعتبارسےملک کادارالحکومت کراچی ہوتو زیادہ محفوظ رہے گا۔

 
TOPICS:

آپ کے تبصرے

Your email address will not be published.

 
متعلقہ خبریں