ہوم   >  پاکستان

بھارت کشمیریوں کی نسل کشی سے توجہ ہٹانا چاہتا ہے، عمران خان

4 weeks ago

وزیراعظم عمران خان کہتے ہیں کہ مقبوضہ کشمير ميں مسلمانوں کی نسل کشی کا خدشہ ہے، بھارت کا ميڈيا دنيا کی توجہ ہٹانے کے پلان پر کام شروع کرچکا۔ اپنے ٹویٹ میں ان کا کہنا ہے کہ افغانستان سے مقبوضہ کشمير ميں دہشت گردوں کے داخلے کا پروپيگنڈا کيا جارہا ہے، اس جھوٹ کو جواز بنا کر بھارتی فوج جعلی فليگ آپريشن کرسکتی ہے، عالمی برادری اپنا کردار ادا کرے۔

وزيراعظم عمران خان نے ايک بار پھر دنيا کو خبردار کیا ہے کہ بھارت کی طرف سے مقبوضہ کشمير ميں مسلمانوں کی نسل کشی کا خدشہ ہے، بھارت کے ميڈيا نے توجہ ہٹانے کے پلان پر عمل شروع کرديا۔

اپنے ٹويٹ میں انہوں نے مزید کہا کہ بھارتی ميڈيا مقبوضہ کشمير ميں افغانستان سے دہشتگردوں کے داخلے کا پروپيگنڈا کر رہا ہے، اس جھوٹ کو جواز بناکر مقبوضہ وادی ميں جعلی فليگ آپريشن کيا جاسکتا ہے، عالمی برادری مقبوضہ وادی پر نظر رکھے اور اپنا کردار ادا کرے۔

وزیراعظم نے پارٹی ترجمانوں کا اجلاس طلب کرکے ہدایات بھی جاری کردیں، کہتے ہیں کہ بھارتی اقدامات کیخلاف بین الاقوامی سطح پر مہم چلائی جائے، مختلف ممالک میں پارلیمانی وفود بھجوائے جائيں، چين، روس اور اسلامی ممالک پر توجہ مرکوز کی جائے۔

مزید جانیے : آج مقبوضہ کشمیر میں خون خرابے کا خدشہ ہے،پاکستان

وزير خارجہ شاہ محمود قريشی نے سماء سے گفتگو ميں موجودہ صورتحال سے آگاہ کيا۔ انہوں نے ڈپلومیٹک کور سے خطاب کے دوران کہا کہ پاکستان اور کشمیری، بھارتی اقدامات کو مکمل طور پر مسترد کرچکے، کئی ممالک کے وزرائے خارجہ نے بھی صورتحال پر تشویش کا اظہار کيا ہے۔

دوسری جانب پاکستان کا دیگر ممالک سے رابطوں کا سلسلہ بھی جاری ہے، وزیراعظم عمران خان نے جرمن چانسلر اینجلا مرکل کو ٹیلی فون کيا جبکہ وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے جاپان اور مالدیپ کے وزرائے خارجہ کو کو مقبوضہ کشمیر کی صورتحال اور خطے کیلئے حالات کی سنگینی سے آگاہ کیا۔

ٰیہ بھی پڑھیں : مقبوضہ کشمیر میں مواصلاتی رابطے مکمل بند ہیں،وزیراعظم

بھارت کی جانب سے کشمیر میں 20 روز سے مکمل لاک ڈاؤن ہے، پوری وادی میں کرفیو نافذ ہے، موبائل، انٹرنیٹ، ٹیلی فون اور دیگر ذرائع ابلاغ بند ہیں، شہریوں کو نقل و حرکت کے ساتھ اپنے سے رابطوں کی بھی اجازت نہیں۔

حریت قیادت نے آج کشمیریوں سے کرفیو توڑ کر گھروں سے باہر نکلنے اور بڑا احتجاج کرنے کی اپیل کی تھی۔

 

آپ کے تبصرے

Your email address will not be published.

 
متعلقہ خبریں