ہوم   >  پاکستان

سالڈ ویسٹ مینجمنٹ بورڈ شہر کو صاف کرنے میں ناکام ہوچکا، میئر کراچی

4 weeks ago

میئر کراچی وسیم اختر نے کہا ہے کہ سالڈ ویسٹ مینجمنٹ بورڈ شہر کو صاف کرنے میں ناکام ہوچکا، سیوریج نظام تباہ ہے بلدیہ عظمیٰ کراچی کی یہ ذمہ داری نہیں مگر ہم اپنے لوگوں کو تکلیف میں نہیں دیکھ سکتے اسی لئے میں نے وفاقی وزیر علی زیدی اور ملک ریاض سے مدد کی درخواست کی تاکہ شہر سے کچرے کے ڈھیروں کو اٹھایا جا سکے جن میں روز بروز اضافہ ہوتا جا رہا ہے۔

سراج الدولہ کالج ڈسٹرکٹ سینٹرل میں بحریہ ٹاؤن کے تعاون سے کچرا اٹھانے کے کام کا معائنہ کرنے اور ڈسٹرکٹ سینٹرل کے تفصیلی دورے کے بعد میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے میئر کراچی وسیم اختر کا کہنا تھا کہ میں بحریہ ٹاؤن کے ملک ریاض کا شکریہ ادا کرتا ہوں کہ انہوں نے ہماری درخواست پر بھاری مشینری بھیجی۔آج جی ٹی ایس سراج الدولہ کو مکمل صاف کر کے اس مشینری کو دوسری جگہ منتقل کریں گے۔

میئر کراچی نے کہا کہ کچرا اٹھانا ہماری ذمہ داری نہیں ہے جن کی ذمہ داری ہے وہ ناکام ہو چکے۔ ہمارے پاس وسائل نہیں ہیں تاہم کے ایم سی نے دستیاب مشینری ڈسٹرکٹ کو دی ہے تاکہ جلد از جلد صفائی کا یہ مرحلہ مکمل ہو۔ایک سوال کے جواب میں میئر کراچی نے کہا کہ وزیراعظم نے کراچی کے لئے 25 ارب اور حیدرآباد کے لئے 5 ارب دینے کا وعدہ کیا تھا اس کا ابھی انتظار ہے۔

انہوں نے کہا ہے کہ بلدیاتی اداروں کے پاس تمام تر صلاحیت موجود ہے مگر وسائل نہیں دیئے جا رہے ان اداروں نے پہلے بھی اس شہر کو صاف رکھا اور اب بھی پوری صلاحیت موجود ہے مگر نظام ایسا بنا دیا کہ بلدیاتی اداروں کو مفلوج کر دیا گیا ہے جس کی وجہ سے یہ ادارے پوری طرح کام نہیں کر سکتے اور شہری پریشان ہیں۔

انہوں نے کہا کہ ہم کوشش کر رہے ہیں کہ مسائل کم ہوں اسی لئے میں نے بحریہ ٹاؤن سمیت وفاق سے مدد مانگی ہے۔

اس موقع پر ڈپٹی میئر کراچی سید ارشد حسن،میٹروپولیٹن کمشنر ڈاکٹر سیدسیف الرحمن، ڈسٹرکٹ سینٹرل کے چیئرمین ریحان ہاشمی، بلدیہ عظمیٰ کراچی، ڈسٹرکٹ میونسپل کارپوریشن اور بحریہ ٹاؤن کے افسران بھی موجود تھے۔

اس موقع پر چیئرمین ریحان ہاشمی نے بتایا کہ سراج الدولہ جی ٹی ایس سے اب تک 300 سے زائد ڈمپر کچرا اٹھا چکے یہ آپریشن شام چھ بجے تک جاری رہے گا۔

 

آپ کے تبصرے

Your email address will not be published.

 
متعلقہ خبریں