Sunday, September 27, 2020  | 8 Safar, 1442
ہوم   > Latest

پارلیمنٹ کا مشترکہ سیشن، مشاہد اللہ اور فواد چوہدری کے درمیان تلخ کلامی

SAMAA | - Posted: Aug 7, 2019 | Last Updated: 1 year ago
SAMAA |
Posted: Aug 7, 2019 | Last Updated: 1 year ago

لیگی رہنما مشاہد اللہ خان نے کہا ہے کہ جب حکومت لوگوں کو اکٹھا کرنا چاہتی ہے تو تحکمانہ انداز نہيں ہوتا، حکومت کو کشمير سے متعلق اپني پاليسی ميں تبديلي کرني پڑے گی۔ اس دوران مشاہد اللہ اور وفاقی وزیر فواد چوہدری کے درمیان تلخ کلامی بھی ہوئی تاہم بعد میں مشاہد اللہ نے...

لیگی رہنما مشاہد اللہ خان نے کہا ہے کہ جب حکومت لوگوں کو اکٹھا کرنا چاہتی ہے تو تحکمانہ انداز نہيں ہوتا، حکومت کو کشمير سے متعلق اپني پاليسی ميں تبديلي کرني پڑے گی۔ اس دوران مشاہد اللہ اور وفاقی وزیر فواد چوہدری کے درمیان تلخ کلامی بھی ہوئی تاہم بعد میں مشاہد اللہ نے کہا کہ ميري جس بات سے ان کو تکليف ہوئي وہ واپس ليتا ہوں۔

پارليمنٹ کے مشترکہ اجلاس میں ن ليگ کے رکن مشاہد اللہ اور فواد چوہدري کے درميان تلخ جملوں کا تبادلہ ہوا۔ چيئرمين سينيٹ صادق سنجرانی نے غير پارليماني الفاظ حذف کراديے۔

مشاہد اللہ خان کی تقریر کے دوران فواد چوہدری غصہ ہوئے اور انھوں نے سخت کلمات ادا کئے۔ اس پر مشاہد اللہ نے کہا کہ يہ لوگ آہستہ آہستہ تميز سيکھ جائيں گے، ميں نے کل سے کسي پر ريمارکس پاس نہيں کيے۔

بھارت کے ساتھ اگر جنگ ہوئی تو ساری دنیا اس کی حدت محسوس کرے گی،فواد چوہدری

مشاہد اللہ کا کہنا تھا کہ اتني فلائٹ تو پي آئي اے کي بھي تاخیر کا شکار نہیں ہوتی جتني وزيراعظم عمران خان کي ہوئي۔ انھوں نے کہا کہ آپ نے حملہ کرنا ہے يا نہيں؟ ہميں جواب تو دينا ہے نا، پہلي دفعہ اپوزيشن سے پوچھا جارہا ہے کہ کيا کروں؟۔

لیگی رہنما نے کہا کہ ميري تقرير شہد سے بھرپور، اس ميں مٹھاس ہي مٹھاس ہے، ہم ايک پارٹي کے ساتھ نہيں اداروں کے ساتھ کھڑے ہيں۔

مشاہد اللہ خان نے کہا کہ حکومت والے مذاق اڑاتے ہيں اور پھر تحکمانہ انداز ميں کہتے ہيں کہ ايک پيج پر آجائيں، بغير کچھ کيے چيزيں ہاتھ ميں آجائيں تو ايسا ہي ہوتا ہے۔

انھوں نے طنزیہ کہا کہ يہ امريکا سے ورلڈ کپ لے کر آئے، بڑی اچھي بات ہے، ڈونلڈ ٹرمپ نے آپ سے جو باتيں کہیں وہ ساري دنيا نے سني تاہم وائٹ ہاؤس کے کوريڈور ميں جو باتيں ہوئيں وہ بھي بتائيں ۔

ہندوستان جنگ چاہتا ہے تو شوق پورا کرلے،ہم تيار ہيں،شيريں مزاری

مشاہد اللہ نے مزید کہا کہ آپ سي پيک کو رول بيک کررہے ہيں تو کيا چين آپ کے حق ميں بيان دے گا،چين نے آپ کے حق ميں نہيں، لداخ کيلئے بيان ديا۔

WhatsApp FaceBook

آپ کے تبصرے

Your email address will not be published.

متعلقہ خبریں
WhatsApp FaceBook
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube