ہوم   >  پاکستان

مصطفیٰ کمال نے نیب کے خلاف بیان پر معذرت کرلی

2 months ago

مصطفيٰ کمال نے کہا ہے کہ پريس کانفرنس کے دوران نيب کو ميري باتيں گراں گزري تو نيب سے معذرت چاہتا ہوں، نیب نے مصطفیٰ کمال کے بیانات کا نوٹس ليتے ہوئے معافي کا مطالبہ کيا تھا۔

چیئرمین پاک سر زمین پارٹی سید مصطفیٰ کمال کا میڈیا سے بات کرتے ہوئے کہا ہے کہ پریس کانفرنس کا مقصد بارشوں کے باعث تباہی بربادی کے حوالے سے دعوت نامہ دیا تھا لیکن چند گھنٹے پہلے نیب کی پریس ریلیز جاری کی گئی ہے نیب کی پریس ریلیز یہ اپنی نوعیت کا انوکھا کیس ہے۔

انہوں نے کہا کہ دس سالوں پہلے جو نظامت کی ہے اس پر تحقیقات کرنا چاہتے ہیں ضرور کریں پاک سر زمین پارٹی پاکستان کے تمام اداروں کا احترام کرتی ہے، اگر نیب کو میری بات گراں گزری ہے تو میں معذرت چاہتا ہوں نیب کی پریس ریلیز پر جو نکات بنائے تھے اس پرچے کو پھاڑ رہا ہوں۔

چیئرمین پی ایس پی کا کہنا تھا کہ کراچی میں تین حکومتی جماعتوں کی نمائندگی ہے اسکے باوجود اس شہر کا کوئی پرسان حال نہیں، دو دن سے سندھ میں حکومت نام کی کوئی چیز نہیں ہے، اربوں روپے کی کرپشن ہو رہی،لوگ مر رہے ہیں، کوئی پوچھے والا نہیں۔

ان کا کہنا تھا کہ عوام کا نااہل حکمرانوں کے خلاف دھائیاں دینے کا فائدہ نہیں اپنے حق کے لئے خود کھڑا ہونا ہوگا، کراچی اور حیدرآباد میں دو دن سے بجلی نہیں، کے الیکٹرک اور حیسکو کی کوئی سرزنش کرنے والا نہیں، ہر بار بارشوں میں لوگ مرجاتے ہیں اس وقت بھی آدھے شہر میں لائٹ نہیں ہے، یہ سارا معاملہ انارکی کی طرف جا رہا ہے یہ ظلم کی حکومت ہے جو نہیں چل سکتی۔

مصطفیٰ کمال نے کہا کہ مئیر اور گورنر بارش والے دن دورے پہ نکلیں تو کوئی فائدہ نہیں، بارش کی تیاری بارشوں سے پہلے کی جاتی ہے کارکنان کو ہدایت کرتا ہوں کہ وہ مصیبت میں پھنسے عوام کی مدد کریں۔

انہوں نے مطالبہ کیا کہ کے الیکٹرک کے مالک کی وزیر اعظم سے اچھے تعلقات ہیں وزیراعظم سرزنش کریں۔

 

آپ کے تبصرے

Your email address will not be published.

 
متعلقہ خبریں