ہوم   >  پاکستان

صادق سنجرانی کو ٹارگٹ کرنے والے رسک لینے سے باز رہیں، جام کمال کا انتباہ

3 months ago

وزیراعلیٰ بلوچستان جام کمال نے نے کہا ہے کہ چیئرمین سینیٹ کے مسئلے پر اپوزیشن  کے ساتھ بیٹھنے کے لئے تیار ہیں۔ صادق سنجرانی کو سافٹ ٹارگٹ کرنے والے رسک لینے سے باز رہیں۔ وزیراعظم کے دورہ امریکا سے پاکستان کی اہمیت اجاگر ہوئی اور نیا اتفاق رائے قائم ہوا۔

کوئٹہ میں نیوز کانفرنس کرتے ہوئے جام کمال خان نے کہا کہ سینیٹ کا اپنا ماحول ہے، اسے خواہشات کے تابع کرنا درست نہیں۔ اپوزیشن جماعتوں سے ملاقاتیں مفید رہیں۔ ان کے ساتھ بیٹھنے کے لئے تیار ہیں۔ چیئرمین سینیٹ کے لئے بلوچستان کا چیپٹر استعمال کیا جا رہا ہے۔ صادق سنجرانی کو سافٹ ٹارگٹ بنانے والوں سے کہتا ہوں کہ رسک نہ لیں۔

جام کمال نے کہا کہ حزب اختلاف اور حکومت چیئرمین سینیٹ کے مسئلے کا حل  بہترین انداز میں نکال سکتے ہیں۔ امید ہے اپوزیشن سینیٹ کے وقار کو اجتماعی انداز میں دیکھے گی۔ مولانا فضل الرحمان نے یقین دہانی کرائی ہے کہ وہ ہماری سفارشات کو کور گروپ میں لیکر جائیں گے۔ چیئرمین سینیٹ کی طرح دیگر مسائل پر بھی پیش رفت ہونی چاہیے۔

وزیراعلیٰ بلوچستان نے کہا کہ چیئرمین سینیٹ کے مسئلے پر اگر ہارس ٹریڈنگ کرنی ہوتی تو اپوزیشن رہنماؤں سے ملاقاتیں نہ کرتے۔ عوامی نیشنل پارٹی مرکز میں اپوزیشن کی اتحادی ہے۔ اگر بلوچستان سے اس کا کوئی سینیٹر ہوتا تو اسے قربانی دینے کی درخواست کرتے۔

انہوں نے کہا کہ وزیر اعظم کے دورہ امریکا کی وجہ سے پاکستان کو تین روز کے دوران دنیا میں بے پناہ عزت ملی۔ چند ماہ قبل تصور کیا جا رہا تھا کہ پاکستان خارجہ پالیسی میں ناکام ہو چکا ہے لیکن یہ تمام خدشات دم توڑ گئے۔ تاریخ میں پہلی مرتبہ کسی امریکی صدر نے مسئلہ کشمیر پر ثالثی کی پیشکش کی ہے۔ افغان امن عمل کو بھی مرحلہ وار آگے بڑھایا جا رہا ہے۔

وزیراعلیٰ نے کہا کہ امریکا کی جانب سے کالعدم تنظیم بی ایل پر پابندی خوش آئندہ ہے، ہمیں دنیا کو باور کروانا ہو گا کہ پاکستان ایک ذمہ دار ملک ہے۔

جام کمال نے کہا کہ ریکوڈک کا فیصلہ جذبات میں کیا گیا۔ عالمی بینک کے فیصلے کے تناطر میں جرمانہ پاکستان اور بلوچستان کے عوام نے ہی بھرنا ہے۔ ثالثی یا جرمانہ بھرنے کا فیصلہ وزیراعظم کی جانب سے قائم کمیشن کے ساتھ مل کر کیا جائے گا۔​

 

آپ کے تبصرے

Your email address will not be published.

 
متعلقہ خبریں