ہوم   >  پاکستان

وزيراعظم عمران خان اور وفدکےاعزازمیں وائٹ ہاوس میں ظہرانہ بھی دیاجائیگا

3 months ago

وزيراعظم عمران خان اور امريکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی اہم ملاقات آج ہوگی۔ وائٹ ہاوس پہنچنے پر ٹرمپ خود استقبال کريں گے۔ آرمی چیف قمر جاوید باجوہ اور ڈی جی آئی ایس آئی بھی وفد میں شامل ہونگے۔ وائٹ ہاؤس ميں وفود کي سطح پر بھي ملاقاتيں ہونگيں، جب کہ اسپيکر نينسي پلوسي اور امريکي...



وزيراعظم عمران خان اور امريکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی اہم ملاقات آج ہوگی۔ وائٹ ہاوس پہنچنے پر ٹرمپ خود استقبال کريں گے۔ آرمی چیف قمر جاوید باجوہ اور ڈی جی آئی ایس آئی بھی وفد میں شامل ہونگے۔



وائٹ ہاؤس ميں وفود کي سطح پر بھي ملاقاتيں ہونگيں، جب کہ اسپيکر نينسي پلوسي اور امريکي فوجي قيادت کے ساتھ بھي اہم بيٹھک لگے گي۔ ٹرمپ وزیراعظم سمیت پاکستانی وفد کے اعزاز میں ظہرانہ ديں گے۔ وائٹ ہاؤس میں ہونے والی ملاقات میں دوطرفہ تعلقات اور تعاون کے فروغ پر بات ہوگی۔ دو بڑے رہنماوں کے درمیان ہونے والی ملاقات میں عافیہ صدیقی اور ڈاکٹر شکیل آفریدی سے متعلق بھی بات چیت کا امکان ہے۔


 

آرمی چیف جنرل قمر جاويد باجوہ اور ڈی جی آئی ایس آئی فیض حمید بھی وفد میں شامل ہیں۔ آرمی چیف پینٹاگون کے دورے کے موقع پر امريکي ہم منصب اور قائم مقام امريکي وزیر دفاع سے ملاقات کریں گے۔ وزیراعظم عمران خان آج رات امريکي تھنک ٹينک سے خطاب کريں گے۔


 

قبل ازیں وزیراعظم عمران خان نے دورے کا پہلا روز انتہائی مصروف گزارا۔ وزیراعظم عمران خان نے آئی ایم ایف کے قائم مقام ایم ڈی ڈیوڈ لپٹن سے ملاقات کی۔ ملاقات میں پاکستان ميں حالیہ معاشی پیش رفت پر تبادلہ خیال ہوا۔ اس موقع پر آئی ایم ایف نےا پاکستان میں ٹیکس ریونیو بڑھانے پر پھر زور دیا۔ قائمقام ايم ڈي کا کہنا تھا کہ سماجی و ترقیاتی منصوبوں پر اخراجات کیلئے ٹیکس محاصل بڑھانا ضروری ہے، ٹیکس محاصل میں اضافے سے قرضوں میں بھی کمی کا رجحان پیدا ہوگا۔


 

دریں اثناعمران خان آئی ٹی کمپنیوں کے سربراہان، پاکستانی نژاد امریکی تاجروں اور سرمایہ کاروں سے بھي ملے۔ ملاقاتوں میں تجارت اور سرمایہ کاری بڑھانے سے متعلق امور پر بات چیت ہوئی۔ وزيراعظم نے پاکستان ميں باقاعدہ سرمايہ کاري کي دعوت بھی ديدي۔


 

اتوار کے روز پاک امریکا تعلقات کے نئے دور کا آغاز کرتے ہوئے وزيراعظم عمران خان تاريخي دورے پر واشنگٹن پہنچے، جہاں انہوں نے اتوار کے روز کیپٹل ارینا میں تاریخی خطاب کیا۔ وزیراعظم عمران خان کا کہنا ہے کہ پاکستاني سفارت کاروں کو بيرون ملک گرين پاسپورٹ جاري نہيں ہوگا، سفارت کار گرین پاسپورٹ لے کر بیرون ملک رہائش اختیار کرليتے ہيں، انہيں اب مدت ملازمت ختم ہونے پر پاکستان جا کر ہي گرين پاسپورٹ حاصل کرنا ہوگا۔










اس موقع پر پورا کیپٹل ارینا عوام کے ہجوم سے کھچا کھچ بھرا ہوا تھا، جہاں ملی نغموں نے پاکستانیوں کا لہو گرمایا۔ ہر طرف ارینا میں پارٹی اور سبز ہلالی پرچموں کی بہار نظر آئی۔ پی ٹی آئی رہنما بھی عوام کے ساتھ جوش و خروش سے قومی ترانہ اور ملی نغمے گاتے رہے۔




وزیراعظم عمران خان بائیس جولائی کو وائٹ ہاؤس ميں امريکي صدر ڈونلڈ ٹرمپ سے ملاقات کریں گے، اس موقع پر امریکی صدر وزیراعظم عمران خان کو وائٹ ہاوس کا دورہ بھی کرائیں گے۔ ڈونلڈ ٹرمپ کي جانب سے پاکستانی وفد کے اعزاز میں ظہرانہ بھي ديا جائے گا، دونوں رہنماؤں کے درمیان ملاقاتوں کے دو دور ہوں گے۔


 

 

قبل ازیں ڈی سی آمد پر عمران خان نے تاجروں سے ملاقاتیں کیں۔ وزيراعظم عمران خان کمرشل فلائٹ سے امريکا پہنچے۔ پاکستان ہاؤس پہنچنے پر پاکستانيوں کي بڑي تعداد استقبال کيليے موجود تھي۔ لوگوں نے اس موقع پر ڈھول کي تھاپ پر رقص بھي کيا۔

 

آپ کے تبصرے

Your email address will not be published.

 
متعلقہ خبریں