ہوم   >  پاکستان

ڈیگاری کوئلہ کان میں پھنسے 9 مزدور جاں بحق، ایک کو زندہ بچا لیا گیا

SAMAA | - Posted: Jul 17, 2019 | Last Updated: 6 months ago
Posted: Jul 17, 2019 | Last Updated: 6 months ago

کوئٹہ کے نواحی علاقے ڈیگاری میں کوئلہ کان حادثے کے دوران 9 مزدور جاں بحق جبکہ ایک مزدور کو زندہ بچا لیا گیا۔

ڈی جی پی ڈی ایم اے عمران زرکون کے مطابق پی ایم ڈی سی ڈیگاری کوئلہ کان میں تین روز قبل مزدور اس وقت پھنس گئے تھے جب زہریلی گیس بھرنے کی وجہ سے دھماکہ ہوا اور کان کا ایک حصہ بیٹھ گیا جس سے وہاں کام کرنے والے دس مزدور پھنس گئے۔

اطلاع ملتے ہی محکمہ معدنیات اور پی ڈی ایم اے کی ریسکیو ٹیمیں علاقے میں پہنچیں اور ریسکیو آپریشن شروع کیا جو تین روز تک جاری رہا اور اس دوران 8 مزدوروں کو مردہ اور دو کو نیم بے ہوشی کی حالت میں نکال کر سول اسپتال کوئٹہ منتقل کیا گیا جہاں ایک اور مزدور چل بسا۔

جاں بحق مزدوروں کی شناخت بشیر خان ولد فتح خان، اکبر خان ولد حکم خان، محمد حنیف ولد رحمت شاہ، سیال گل ولد ورشمین، زیارت گل ولد بشیر گل، حضرت گل ولد لال گل اور شریف کے نام سے کر لی گئی۔

کوئلہ کان میں سے دو مزدوروں کو زندہ اور مردہ حالت میں نکال لیا گیا

حادثے میں جاں بحق اور زندہ بچ جانے والے مزدوروں کا تعلق افغانستان سے ہے جوکہ مزدوری کیلئے پاکستان آئے تھے۔ لاشیں ضروری کارروائی کے بعد تدفین کیلئے آبائی علاقے روانہ کر دی گئیں جبکہ زندہ بچ جانے والا مزدور تاحال سول اسپتال میں زیر علاج ہے۔

عمران زرکون کے مطابق پی ایم ڈی سی ڈیگاری کوئلہ کان ساڑھے چار ہزار فٹ گہری تھی جس میں دو روز تک میتھین گیس بھری رہی جس کی وجہ سے مزدوروں تک رسائی میں مشکلات کا سامنا کرنا پڑا۔ آج زہریلی گیس کی مقدار کم ہونے کے بعد پی ڈی ایم اے اور محکمہ معدنیات کی ریسکیو ٹیموں نے مقامی مزدوروں کے ساتھ مل کر ریسکیو آپریشن مکمل کیا۔

وزیراعلیٰ بلوچستان جام کمال نے ڈیگاری کان حادثے پر افسوس کا اظہار کرتے ہوئے متاثرہ لواحقین کو ہر ممکن معاونت کی یقین دہانی کروائی ہے۔ جام کمال نے حادثے کی تحقیقات کا حکم دیتے ہوئے محکمہ معدنیات سے تین روز میں رپورٹ طلب کر لی ہے۔

 

آپ کے تبصرے

Your email address will not be published.

 
متعلقہ خبریں
 
 
 
 
 
 
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube