اب یا تو انتخاب ہوگا، یا انقلاب آئے گا، بلاول بھٹو

July 14, 2019

پاکستان پیپلزپارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو کا کہنا ہے کہ اس دور حکومت میں عوام کا معاشی قتل ہو رہا ہے، اس سے زیادہ نہ عوام برداشت نہیں کرسکتے، اب یا تو انتخاب ہوگا یا انقلاب آئے گا۔

رحیم یار خان کے علاقے صادق آباد میں ورکرز کنونشن سے خطاب میں بلاول بھٹو زرداری کا کہنا تھا کہ کٹھ پتلیوں کو گھر بھیجا جائے گا، حکومت نے بجٹ کے ذریعے غریبوں کیلئے تکلیف، جب کہ امیروں کیلئے ریلیف اور ایمنسٹی سکیم پیش کردی۔

انہوں نے کہا کہ چاروں صوبے دیوالیہ ہو رہے ہیں اور پنجاب کا ترقیاتی بجٹ کم کر دیا گیا ہے، پیپلزپارٹی کٹھ پتلی وزیراعلی پنجاب کے خلاف آواز بلند کرتی رہے گی، عمران خان نے عوام سے کیے وعدے پورے نہیں کئے، یہ کہتے تھے کہ ہم خودکشی کرلیں گے مگر آئی ایم ایف کے پاس نہیں جائیں گے، ایک سال میں پتا چلا عمران خان کا ہر وعدہ جھوٹا نکلا، سلیکٹڈ وزیراعظم نے یو ٹرن لیا اور آئی ایم ایف کے سامنے سر جھکا دیا۔

بلاول کا کہنا تھا کہ عمران خان نے ایک کروڑ نوکریاں دینے کا وعدہ کیا لیکن ایک بھی نہیں دی۔ صوبوں کا معاشی قتل ہو رہا ہے، سندھ میں ڈاکہ ڈالا گیا، سب سے زیادہ نقصان پنجاب کا ہوا، عوام دشمن بجٹ میں غریب کے تکلیف امیر کے لیے ریلیف ہے، مگر پیپلزپارٹی عوام کا تحفظ کرتی رہے گی، اب صرف

صاف اور شفاف الیکشن کرنا پڑیگا۔

صادق آباد میں میں گرمی کے سبب پیپلزپارٹی کے ورکرز کنونشن کیلئے خصوصی تیاریاں کی گئی تھیں، کارکنوں کیلئے ائیر کنڈیشنڈ ہال اور کھانے پینے کا بھی انتظام کیا گیا تھا۔