ہوم   >  پاکستان

پاکستان کیلئے سب سے بڑا خطرہ فتویٰ باز مولوی ہیں، فواد چوہدری

5 months ago

وفاقی وزیر برائے سائنس و ٹیکنالوجی فواد چوہدری نے ملک کے 75 فیصد مسائل کی وجہ علمائے کرام کو قرار دے دیا۔ فواد چوہدری نے چیئرمین پیپلز پارٹی بلاول بھٹو کی جانب سے مذہب کارڈ کی مخالفت پر ان کی تعریف کی۔

اپوزیشن جماعتوں کی اے پی سی کے حوالے سےنام لیے بغیر مولانا فضل الرحمان پر تنقید کرتے ہوئے فواد چوہدری نے کہا کہ قوم کو فتویٰ باز مولویوں کے رویہ کے خلاف جہاد کرنا چاہیے۔

سربراہ جمعیت علمائے اسلام مولانا فضل الرحمان کی جانب سے بلائی جانے والی آل پارٹیز کانفرنس جیوٹی وی کے پروگروام ’’آج شاہ زیب خانزادہ ‘‘ میں زیر بحث آئی۔ میزبان کا کہنا تھا کہ اجلاس میں ایسی بہت سی باتیں ہوئیں جن کا ذکر پریس کانفرنس یا اعلامیے میں نہیں کیا گیا۔ جیو نیوز کے ذرائع کے مطابق اے پی سی میں مولانا فضل الرحمان اور بلاول بھٹو کے درمیان تکرار ہوئی۔

میزبان کے مطابق مولانا کا کہنا تھا کہ ہم مڈ ٹرم انتخابات کی جانب جائیں گے اور احتجاج کو آگے لے کرجائیں گے، اگر اس کے نتیجے میں مارشل لاء کا سامنا کرنا پڑا تو کریں گے۔ جواب میں بلاول بھٹو کا کہنا تھا کہ کسی صورت پارلیمنٹ کو ڈی ریل نہیں ہونے دوں گا۔ میں نانا، 2 ماموں اور والدہ گنوا چکا ہوں، قوم کا بوجھ میرے 2 کندھوں پر ہے۔

شاہ زیب خانزادہ نے دعویٰ کیا کہ مولانا فضل الرحمان نے تجویزدی کہ عمران خان نے صحابہ کرام کی توہین کی ہے جس کا ذکراعلامیے میں کیا جائے۔ اس بات سے اختلاف کرتے ہوئے بلاول بھٹو کا کہنا تھا کہ کسی صورت میں مذہب کا کسی کے خلاف استعمال قبول نہیں۔

پروگرام کے انٹرو میں اس حوالے سے بلاول کی فہم وفراست کی تعریف کی گئی۔ یہ ویڈیو کلپ وفاقی وزیر برائے سائنس اور ٹیکنالوجی فواد چوہدری نے سماجی رابطوں کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر شیئر کیا اورمذہب کے استعمال کے حوالے سے علمائے کرام پر کڑی تنقید کرڈالی۔

فواد چوہدری نے اپنی ٹویٹ میں لکھا کہ پاکستان کیلئے سب سے بڑا خطرہ فتویٰ باز مولوی ہیں۔ تمام طبقہ فکر کو اس رویے کیخلاف جہاد کرنا چاہیے۔

انہوں نے 75 فیصد مسائل کی وجہ علمائے کرام کو قرار دیتے ہوئے مذہب کارڈ کے خلاف بلاول بھٹو کے اسٹینڈ پر انہیں قابل تعریف قرار دیا۔

 

آپ کے تبصرے

Your email address will not be published.

 
متعلقہ خبریں